Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش کے طلبہ نے منہ پھیر لیا

آندھرا پردیش کے طلبہ نے منہ پھیر لیا

تلنگانہ خانگی انجینئرنگ کالجس میں داخلے کم ہوگئے
حیدرآباد ۔ 17 ۔ فروری : ( سیاست نیوز) : تلنگانہ کے خانگی انجینئرنگ کالجس میں آندھرا پردیش کے طلبہ کے داخلوں کا رجحان انتہائی کم ہوگیا ۔ آندھرا پردیش کے صرف 576 طلبہ نے تلنگانہ کے خانگی انجینئرنگ کالجس میں داخلہ لیا ہے ۔ سال 2014-15 میں آندھرا پردیش کے 2 ہزار طلبہ نے داخلہ لیا تھا ۔ آندھرا پردیش کے طلبہ اب اپنی ریاست میں داخلے کو ترجیح دے رہے ہیں ۔ ریاست تلنگانہ میں رنگاریڈی اور حیدرآباد اضلاع انجینئرنگ کالجس کے بڑے مراکز ہیں ۔ ہر سال بے شمار طلبہ ان کالجس میں داخلے لیتے ہیں ۔ ریاست کی تقسیم اور فیس واپسی اسکیم کی وجہ سے ان کالجس میں داخلے کم ہوئے ہیں ۔ حالانکہ آندھرا پردیش کی حکومت نے ٹیوشن فیس واپس کرنے کا تیقن دیا تھا ۔ تاہم اندیشہ مند والدین نے اپنے بچوں کو آندھرا پردیش میں داخلے دلانے کو ترجیح دی ہے ۔ پالی ٹیکنیک کالجس میں بھی داخلے کم ہوئے ہیں ۔ تعلیمی سال 2014-15 کے دوران تقریبا ایک ہزار دو سو طلبہ نے داخلے لیے تھے ۔ اس سال پالی ٹیکنیک کورس میں صرف 188 طلبہ نے داخلے حاصل کئے ہیں ۔ تلنگانہ کے کالجس میں داخلے حاصل کرنے والوں کی تعداد اگلے تعلیمی سال مزید کم ہوجائیگی ۔۔

TOPPOPULARRECENT