Saturday , March 25 2017
Home / Top Stories / اپوزیشن مباحث سے کترارہا ہے ،جیٹلی ۔ منموہن زبانی تکرار

اپوزیشن مباحث سے کترارہا ہے ،جیٹلی ۔ منموہن زبانی تکرار

مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے آج اپوزیشن پر الزام لگایا کہ وہ بحث سے فرار حاصل کرنے بڑے کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے مسئلہ کو بہانہ بنارہا ہے۔ سابق وزیراعظم منموہن سنگھ کی تنقید پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے ارون جیٹلی نے کہاکہ یہ کوئی حیرتناک بات نہیں ہے کہ وہ اعظم ترین مقدار میں کالے دھن کی گشت بند ہوجانے پر برہم ہیں۔ قبل ازیں راجیہ سبھا میں سابق وزیراعظم منموہن سنگھ نے اپنی تقریر میں بڑے کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کو موجودہ حکومت کی بہت بڑی غلطی قرار دیا تھا۔ چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال نے مرکزی حکومت کے اقدام پر شدید تنقید کی۔ مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے تاہم کہاکہ کانگریس کے نامور قائد کے دلائل کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ اُن کا یہ دعویٰ کہ جی ڈی پی میں 2 فیصد کمی واقع ہوگی، انھوں نے کہاکہ اُن کے اندیشے بے بنیاد ہیں۔ ہندوستانی معیشت زیادہ رفتار سے ترقی کرنے کا امکان ہے۔

منموہن سنگھ کی باتوں کو سنجیدگی سے لیا جائے
ماہر معاشیات کا ہر لفظ درست، شیوسینا سربراہ کا بیان
ممبئی۔24 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) کرنسی نوٹوں کی منسوخی کے مسئلہ پر مرکز کو مسلسل نشانہ بنانے کے بعد شیوسینا سربراہ اودھو ٹھاکرے نے مرکز کے اس اقدام کو عام آدمی سے زبردستی اصولی والا قدم قرار دیا اور کہا کہ بی جے پی کو سابق وزیراعظم منموہن سنگھ کے الفاظ پر سنجیدگی سے غور کرنا چاہئے۔ سابق وزیراعظم نے نوٹوں کی منسوخی کے لئے مرکز کے فیصلے کو منظم لوٹ کھسوٹ سے تعبیر کیا ہے۔ ممتاز ماہر معاشیات نے جو باتیں کہی ہیں وہ درست ہیں۔ اودھو ٹھاکرے نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ میں نوٹوں کی منسوخی پر عمل آوری کے خلاف تنقید کرنے میں کوئی پس و پیش نہیں کروں گا۔ جس طریقہ سے حکومت نے قدم اٹھایا ہے، اس پر ریفرنڈم ہونا چاہئے۔ یوروپی یونین سے دستبرداری سے قبل برطانیہ نے جس طرح ریفرنڈم کروایا تھا اسی خطوط پر عوام کی رائے طلب کی جانی چاہئے۔ اس ریفرنڈم کے بعد وزیراعظم برطانیہ نے استعفیٰ دے دیا تھا۔ مودی کو بھی ریفرنڈم کے بعد یہ قدم اٹھانا چاہئے۔

 

 

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT