Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اپوزیشن میں ہمت کے فقدان سے متحدہ مقابلہ

اپوزیشن میں ہمت کے فقدان سے متحدہ مقابلہ

ٹی آر ایس کے ترقیاتی کام سے اپوزیشن کی نیند حرام ، ٹی ہریش راؤ
حیدرآباد ۔ 25 ۔ اپریل (سیاست نیوز) وزیر آبپاشی ہریش راؤ نے الزام عائد کیا کہ کھمم کے پالیرو اسمبلی حلقہ میں ٹی آر ایس سے مقابلہ کی ہمت نہ ہونے کے سبب اپوزیشن جماعتیں متحدہ طور پر مقابلہ کر رہی ہیں۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ہریش راؤ نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے جن ترقیاتی اور فلاحی پروگراموں کا آغاز کیا ہے ، انہیں دیکھ کر اپوزیشن کی نیند حرام ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں خوف کا شکار ہے کہ دیگر انتخابات کی طرح پالیرو میں بھی انہیں شکست کا سامنا کرنا پڑے گا۔ انہوں نے کہاکہ تلگو دیشم پارٹی کا قیام کانگریس کی مخالفت میں کیا گیا تھا لیکن آج وہی پارٹی کانگریس کی تائید کر رہی ہے۔ انہوں نے کانگریس کے حق میں تلگو دیشم اور وائی ایس آر کانگریس کی تائید کو بوکھلاہٹ کا نتیجہ قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ مشن بھگیرتی پروگرام میں رکاوٹ پیدا کرنے والے گتا سکھیندر ریڈی ایم پی کی صورت سے پالیرو میں عوام سے ووٹ کی اپیل کر رہے ہیں۔ ہریش راؤ کے مطابق عوام انہیں مناسب سبق سکھائیں گے۔ انہوں نے یاد دلایا کہ سابق میں تلنگانہ کے مسئلہ پر کے سی آر کے استعفیٰ کے بعد راج شیکھر ریڈی کی ہدایت پر جیون ریڈی نے انتخابات میں حصہ لیا تھا ۔ اچم پیٹ میں بھی انہوں نے مقابلہ کیا اور انہیں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ پالیرو اسمبلی حلقہ کے ضمنی انتخاب میں کانگریس کو سخت ہزیمت کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ہریش راؤ نے کہا کہ سابق حکومتوں نے آبپاشی پراجکٹس کو نظرانداز کردیا تھا اور ایک پراجکٹ کی تعمیر کیلئے 10 سے 20 سال کا وقفہ لیا گیا لیکن ٹی آر ایس حکومت اندرون دو سال پراجکٹس کی تکمیل کا منصوبہ رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر ضلع میں ایک لاکھ ایکر اراضی کو سیراب کرنا حکومت کا منصوبہ ہے، تاکہ ریاست کو خشک سالی سے نجات دلائی جاسکے۔ ہریش راؤ نے کہا کہ حکومت کی اسکیمات سے متاثر ہوکر اپوزیشن ارکان اسمبلی و کونسل ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں۔ انہوں نے شمولیت کے خلاف کانگریس اور تلگو دیشم کی بیان بازی کو یہ کہتے ہوئے مسترد کردیا کہ وائی ایس راج شیکھر ریڈی نے جب ٹی آر ایس کے ارکان اسمبلی کو کانگریس میں شامل کیا تھا ، اس وقت یہ قائدین خاموش تھے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT