Monday , October 23 2017
Home / سیاسیات / اڑیشہ اسمبلی کے مانسون اجلاس کا ہنگامہ خیز آغاز

اڑیشہ اسمبلی کے مانسون اجلاس کا ہنگامہ خیز آغاز

قومی ترانہ کے دوران حکمران جماعت ارکان کی نعرہ بازی
بھوبھانیشور ۔ 21 ۔ ستمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : اڑیشہ اسمبلی کے مانسون اجلاس کا آج ہنگامہ خیز آغاز ہوا جب کہ حکمران بیجو جنتادل ارکان نے مہاندی اور پولاورم کے مسئلہ پر ایوان کی کارروائی میں رکاوٹ پیدا کردی ۔ اسپیکر نے بے قابو حالات کے پیش نظر 3 بجے تک کارروائی ملتوی کردی ۔ اجلاس کے پہلے دن کارروائی شروع ہوتے ہی حکمران جماعت سے ارکان نے مہاندی اور پولاورم کے مسئلہ پر مرکز اور چھتیس گڑھ حکومت کے خلاف نعرے بلند کئے ۔ بی جے پی ڈی رکن بیامکیش رے سب سے پہلے اپنی نشست سے اُٹھ کھڑے ہوگئے اور قومی ترانہ بجاتے وقت نعرہ بازی شروع کردی گو کہ اپوزیشن لیڈر نرسنگ مصرا ( کانگریس ) نے اس موقعہ پر کچھ کہنے کی کوشش کی ۔ لیکن اسپیکر نے انہیں اجازت نہیں دی اور قومی ترانہ کے فوری بعد ایوان کی کارروائی ملتوی کردی گئی ۔ اسمبلی کے احاطہ میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر نے الزام عائد کیا کہ چیف منسٹر کی ہدایت پر حکمران جماعت نے قومی ترانہ کی توہین کی ہے جب کہ قومی ترانہ بجاتے وقت حکمران جماعت کے ارکان نے ہنگامہ آرائی کی اس وقت قائد ایوان بھی موجود تھے ۔ انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ اسپیکر نے بھی حکمران ارکان کے طرز عمل پر خبردار نہیں کیا ۔ تاہم حکمران جماعت کے ارکان نے اس الزام کو مسترد کردیا اور یہ ادعا کیا کہ قومی ترانہ کا کوئی عدم احترام نہیں کیا گیا ۔ ایوان کی کارروائی ملتوی ہونے کے فوری بعد حکمران جماعت کے ارکان بشمول وزراء نے راج بھون تک مارچ کیا اور گورنر ایس سی جامیر کو ایک میمورنڈم پیش کیا ۔ وزیر صنعت نے بتایا کہ مہاندی آبی تنازعہ اور پولاورم پراجکٹ کے خلاف ہم نے احتجاج درج کروایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قانون کی خلاف ورزی کے لیے پیشرو یو پی اے حکومت اور موجودہ این ڈی اے حکومت برابر کی ذمہ دار ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT