Sunday , March 26 2017
Home / شہر کی خبریں / اکبر اویسی پر حملہ کی ویڈیو ریکارڈ کرنے کا اعتراف

اکبر اویسی پر حملہ کی ویڈیو ریکارڈ کرنے کا اعتراف

حیدرآباد ۔ 14 فبروری ۔ ( سیاست نیوز) چندرائن گٹہ حملہ کیس کی سماعت آج بھی جاری رہی جس کے دوران tv4 کے ویڈیو گرافر نے عدالت میں اپنا بیان قلمبند کروایا اور اس پر جرح بھی کی گئی ۔ 27 سالہ شیخ سلیم ساکن فلک نما نے بتایا کہ وہ مذکورہ ٹی وی چینل میں سال 2008 ء سے ویڈیو گرافر کی حیثیت سے ملازمت کررہاہے اور وہ اکثر ایم آئی ایم پارٹی کے پروگرامس کوکوریج کرتا ہے۔ نیوز ٹی وی کے نمائندے ایس ایم رفیع کی ہدایت پر اُس نے 30اپریل سال 2011ء کو بارکس علاقہ میں منعقدہ مجلس پارٹی کے پروگرام کے لئے صبح 8:30 بجے گیا تھا جہاں پر قبرستان کی حصار بندی کیلئے دیوار کی تعمیر کے افتتاح اور معائنہ کیلئے ایم ایل اے چندرائن گٹہ اکبرالدین اویسی پہونچے تھے ۔ اور وہاں سے بارکس منڈی سے گزرتے ہوئے کتہ پیٹ میں منعقد ہونے والے جلسہ کی تیاریوں کا بھی جائزہ لیا تھا ۔ اکبر اویسی اور ایم ایل اے ملک پیٹ احمد بلعلہ واپس بارکس مجلس پارٹی کے دفتر پہونچ کر چائے نوشی کی اور میں اُن کا باہر انتظار کررہا تھا ۔ تقریباً 15 تا 20 منٹ کے وقفہ کے بعد مذکورہ ارکان اسمبلی دفتر کے باہر نکلے اور چندرائن گٹہ رکن اسمبلی اپنی جیپ میں سوار ہوکرآگے بڑھ گئے ۔ کچھ دیر بعد اُس نے چیخ و پکار اور فائرنگ کی آوازیں سنی اور اُس نے واقع کی ویڈیو ریکارڈنگ شروع کردی ۔ گواہ نے بتایا کہ محمد پہلوان کے حامیوں نے رکن اسمبلی چندرائن گٹہ پر حملہ کرنا شروع کردیا اور اُس نے اس تمام واقعہ کی ویڈیو گرافی کی اور بعد ازاں اکبر اویسی کو جیپسی میں اویسی ہاسپٹل پہونچایا گیا ۔ (سلسلہ صفحہ …پر)

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT