Friday , June 23 2017
Home / ہندوستان / ’’اکھلیش، اقتدار میں ’اندھے‘ ہوگئے ہیں ، مرکز کے کام نہیں دیکھ سکتے ‘‘

’’اکھلیش، اقتدار میں ’اندھے‘ ہوگئے ہیں ، مرکز کے کام نہیں دیکھ سکتے ‘‘

’’کام کی بات‘‘ ریمارک پر مودی کا جوابی وار، یوپی میں انتخابی جلسوں سے خطاب ، ایس پی ۔کانگریس اتحاد پر تنقید

لکھیم پور کھیری ۔13 فبروری ۔ (سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم نریندر مودی نے اُترپردیش کے چیف منسٹر اکھلیش یادو کی طرف سے گزشتہ روز اپنے خلاف ’’کام کی بات کیجئے ‘‘ ریمارک کا جواب دیتے ہوئے آج کہا کہ یوپی کے چیف منسٹر انھیں حاصل ’’مکمل اقتدار سے اندھے ہوگئے ہیں‘‘ جنھیں مرکز کی طرف سے کئے کام نظر نہیں آرہے ہیں۔ مودی نے یہاں انتخابی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے اکھلیش کے زیرقیادت ایس پی حکومت سے کہا کہ وہ گزشتہ پانچ سال کے دوران کئے گئے اپنے کام کا حساب پیش کرے۔ مودی نے اُترپردیش کے عوام سے بی جے پی کو ایک موقع دینے کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ اگر ان کی پارٹی برسراقتدار آتی ہے تو تمام سماج دشمن عناصر کو اندرون چھ ماہ جیل کی سلاخوں کے پیچھے ڈال دیا جائے گا ۔ وزیراعظم نے مرکز میں اُن کی حکومت کی طرف سے کے گئے اقدامات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہاکہ ’’وہ (اکھلیش) یہ کام نہیں دیکھ سکتے کیونکہ بھرپور طاقت و اقتدار میں وہ اندھے ہوگئے ہیں‘‘ ۔ واضح رہے کہ اکھلیش نے گزشتہ روز ’’من کی بات‘‘ پروگرام کے حوالے سے مودی کا مذاق اُڑاتے ہوئے کہا تھا کہ ’’میں اُن ( مودی) سے پوچھنا چاہتا ہوں کہ وہ کام کی بات کب کریں گے؟‘‘۔ مودی نے اکھلیش حکومت کی طرف سے کئے گئے مختلف اقدامات میں نقائص کی شکایت کی اور امن و قانون کی صورتحال پر اکھلیش کی مذمت کی۔ مودی نے کہا کہ عصمت ریزی اور قتل کے واقعات میں اضافہ ہورہاہے غنڈوں کی ٹولیاں جیل کی سلاخوں کے پیچھے سے سرگرم ہیں۔ یہ استدلال پیش کرتے ہوئے کہ عصمت ریزی اور فسادات کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے مودی نے اکھلیش سے سوال کیا کہ ’’کیاں یہی آپ کا کام اور کارنامہ ہے جس کی آپ بات کررہے ہیں‘‘ ۔ وزیراعظم نے ووٹروں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ’’ہمیں ایک موقع دیجئے گن ، چاقو اور چھری استعمال کرنے والے سلاخوں کے پیچھے ہوں گے ‘‘ ۔ مودی نے ایس پی ۔ کانگریس اتحاد کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ ہفتہ کو منعقدہ رائے دہی کے پہلے مرحلہ نے ظاہر کردیا ہے کہ کوئی بھی اتحاد ان کی حکومتوں کے گناہوں کو نہیں دھوسکتا ‘‘۔ مودی نے اکھلیش کو یاد دلایا کہ انھوں نے ’’سابق بی ایس پی دور حکومت میں ہوئے اسکامس کی تحقیقات کا وعدہ کیا تھا اور آخر کس لئے آپ نے مایاوتی دور کے اسکامس کی تحقیقات کاارادہ ترک کردیا ۔ اس کے عوض آپ (اکھلیش ) کو کیا ملا ہے ‘‘ ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT