Thursday , August 24 2017
Home / Top Stories / اکھلیش گروپ کو سائیکل حاصل : الیکشن کمیشن

اکھلیش گروپ کو سائیکل حاصل : الیکشن کمیشن

اکثریت کی تائید کا جواز ، عظیم اتحاد کی راہ ہموار ، سیاسی حلقوں کی جانب سے فیصلہ کا خیرمقدم
لکھنو ۔16جنوری ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) ملائم سنگھ یادو کو شدید ضرب پہونچاتے ہوئے الیکشن کمیشن نے آج سماج وادی پارٹی کا انتخابی نشان ’’سائیکل ‘‘ اکھلیش یادو گروپ کے لئے مختص کردیا اور اس گروپ کو سماج وادی پارٹی تسلیم کرلیا۔ اس طرح چیف منسٹر کو یوپی کے اسمبلی انتخابات سے پہلے زبردست حوصلہ حاصل ہوا ۔ دریں اثناء نئی دہلی سے موصولہ اطلاع کے بموجب الیکشن کمیشن نے ادعا کیا کہ اکھلیش گروپ کو اکثریت کی تائید حاصل ہے ۔ قومی کنونشن میں 5,721 مندوبین نے شرکت کی تھی جن میں سے 4,400 نے چیف منسٹر کی تائید کی یادداشت پر دستخط کئے ۔ الیکشن کمیشن نے کہاکہ اس طرح انتخابی نشان کی اکھلیش گروپ کو حوالگی اور اسے حقیقی سماج وادی پارٹی تسلیم کرنا غلط نہیں ہے ۔ تین رکنی الیکشن کمیشن نے چیف الیکشن کمشنر نسیم زیدی کی زیرصدارت پارٹیوں کی جانب سے پرچہ جات نامزدگی داخل کرنے سے عین قبل یہ فیصلہ سنایا ہے ۔ اس طرح اکھلیش گروپ کو سماج وادی پارٹی کے انتخابی نشان سائیکل کے استعمال کا مستحق قرار دیا۔ الیکشن کمیشن نے قبل ازیں اپنا حکم دلائل کی سماعت کے بعد 13 جنوری تک کے لئے محفوظ کرلیا تھا ۔ چیف منسٹر کے کیمپ میں اُن کے حامیوں کے ہجوم نے اس فیصلے پر جشن منایا اور چیف منسٹر کی قیامگاہ تک نقارے بجاتے ، رقص کرتے اور پٹاخے جلاتے ہوئے جلوس نکالا ۔ فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے سماج وادی پارٹی کے جنرل سکریٹری رام گوپال یادو نے جو اکھلیش کے چچا ہیں کہا کہ یہ اُن کے گروپ کی پہلی کامیابی ہے ۔ انھوں نے کہاکہ اس طرح عظیم سیکولر اتحاد کی راہ ہموار ہوگئی ہے جو متحدہ طورپر انتخابات میں حصہ لے گا ۔ وہ واضح طورپر کانگریس اور دیگر چند سیاسی پارٹیوں کے ساتھ اتحاد کا حوالہ دے رہے تھے ۔ رام گوپال یادو کے علاوہ مختلف سیاسی حلقوں کی جانب سے الیکشن کمیشن کے فیصلے کا خیرمقدم کیا گیا۔ کانگریس نے کہا کہ عظیم سیکولر اتحاد یوپی میں انتخابات سے پہلے قائم کرنے کی کوشش کی جائے گی ۔ اُس نے الیکشن کمیشن کے اکھلیش یادو کو انتخابی نشان سائیکل مختص کرنے کے فیصلے کا خیرمقدم کیا ۔ ترنمول کانگریس کی سربراہ چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی نے چیف منسٹر یوپی اکھلیش یادو کو سماج وادی پارٹی کا انتخابی نشان سائیکل حاصل ہونے پر مبارکباد پیش کی اور کہا کہ یہ چیف منسٹر یوپی اکھلیش یادو کی بڑے پیمانے پر حوصلہ افزائی ہے ۔ نئی دہلی سے موصولہ اطلاع کے بموجب کانگریس کی سینئر قائد شیلا ڈکشٹ نے چیف منسٹر یوپی اکھلیش یادو کو الیکشن کمیشن کے فیصلے کے بعد مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی کا انتخابی نشان حاصل ہونے پر وہ اکھلیش یادو کو مبارکباد پیش کرتی ہیں۔ کانگریس کی جانب سے امکانی اتحاد کے بارے میں سوال کا جواب دینے سے انھوں نے گریز کرتے ہوئے نشاندہی کی کہ بات چیت دونوں پارٹیوں کے درمیان جاری ہے ، اس لئے وہ ابھی کچھ نہیں کہہ سکتیں ۔ قبل ازیں جاریہ ماہ شیلا ڈکشٹ نے کہاتھا کہ عظیم اتحاد کی صورت میں اکھلیش یادو انتخابی مہم کا چہرہ ہوں گے اور وہ چیف منسٹری کی امیدواری سے سبکدوش ہونے کیلئے تیار ہیں ۔ دریں اثناء لکھنو سے موصولہ اطلاع کے بموجب چیف منسٹر یوپی اکھلیش یادو کے حامیوں نے آج سماج وادی پارٹی کے ہیڈکوارٹرس پر نئی نیم پلیٹ نسب کردی جس پر تحریر ہے کہ ’’اکھلیش یادو ، صدر پارٹی ‘‘ ۔ تاہم اکھلیش یادو کے حامیوں نے ادعا کیا کہ اُن پر مسلمانوں کے بارے میں منفی رویہ اختیار کرنے کا الزام بے بنیاد ہے ۔ چیف منسٹر نے ملائم سنگھ یادو کو اُن کے خلاف اُکسانے کا دو افراد پر الزام عائد کیا ۔

TOPPOPULARRECENT