Wednesday , August 16 2017
Home / Top Stories / اکھیلیش ۔ ملائم ملاقات ، مفاہمت کے اِشارے

اکھیلیش ۔ ملائم ملاقات ، مفاہمت کے اِشارے

لکھنؤ۔ 10 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر اترپردیش اکھیلیش یادو نے آج اپنے والد اور سماج وادی پارٹی کے سرپرست ملائم سنگھ یادو سے ملاقات کرکے پارٹی کے دونوں گروپس کے درمیان مفاہمت کے اشارے دیئے۔ 90 منٹ طویل دوبدو ملاقات میں جو ملائم سنگھ یادو کی قیام گاہ پر ہوئی، سماج وادی پارٹی کے سرپرست نے اکھیلیش یادو کے پارٹی کے چیف منسٹری کے امیدوار ہونے کا اعادہ کرتے ہوئے باہمی مفاہمت کے امکانات کو تقویت دی۔ پارٹی کے داخلی ذرائع کے بموجب اکھیلیش یادو کے صف آرائی کرنے والے چچا شیوپال یادو اور راجیہ سبھا کے رکن امر سنگھ اکثر اکھیلیش یادو کی جانب سے بیرونی افراد قرار دیئے جاتے رہے ہیں۔ باپ بیٹے کی ملاقات کے دوران دونوں بھی موجود نہیں تھے۔ ملاقات کے بعد اکھیلیش اخباری نمائندوں سے سوالات کے جواب دیئے بغیر روانہ ہوگئے۔ آج کی ملاقات ملائم سنگھ یادو کے موقف میں نرمی کے بعد اولین ملاقات تھی۔ قبل ازیں باپ بیٹے نے گزشتہ ہفتہ ملاقات کی تھی لیکن تعطل توڑنے میں ناکام رہے تھے۔ پارٹی پر کنٹرول کے تلخ تنازعہ کے دوران ملائم سنگھ یادو نے اکھیلیش یادو کو پارٹی کا چیف منسٹری کا امیدوار قرار دیتے ہوئے تلخی ختم کردی۔ پارٹی کے مبصرین نے نشاندہی کی ہے کہ شیوپال اور امر سنگھ کی ملاقات کے دوران غیرموجودگی ایک نمایاں علامت ہے۔ غالباً ملائم سنگھ چاہتے ہیں کہ تنازعہ کا ہمیشہ کیلئے خاتمہ کردیں، اسی لئے ان دونوں کو بات چیت کے دوران مدعو نہیں کیا گیا تھا۔ چیف منسٹر اکھیلیش یادو نے دونوں قائدین پر الزام عائد کیا تھا کہ وہی ملائم سنگھ یادو کو ان کے خلاف اکسا رہے ہیں، تاہم ملائم سنگھ نے تاحال اس بات کا اشارہ نہیں دیا کہ وہ اپنے بیٹے کے دو قریبی بااعتماد ساتھیوں کو بھی امیدواروں کی فہرست میں شامل کریں گے۔ رام گوپال یادو ، اکھیلیش یادو کی مہم کی قیادت کررہے تھے۔ یکم جنوری کو انہوں نے ہی اکھیلیش یادو کو سماج وادی پارٹی کا صدر منتخب کیا تھا اور کہا تھا کہ وہ ملائم سنگھ یادو کے جانشین ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT