Tuesday , July 25 2017
Home / Top Stories / اگر یہی اچھی حکمرانی ہے تو ہم سب قابل اعتراض ہیں : یچوری

اگر یہی اچھی حکمرانی ہے تو ہم سب قابل اعتراض ہیں : یچوری

نوٹوں کی تنسیخ کی مہم محنت کش طبقہ کے خلاف‘جموں و کشمیر کی مخلوط حکومت پر عوامی مسائل سے بے حسی کا الزام : سی پی آئی (ایم)

نئی دہلی ۔ 25ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام) جنرل سکریٹری سی پی آئی ( ایم ) سیتارام یچوری نے آج مودی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اگر اچھی حکمرانی کے دن کا مطلب عوام کے مصائب میں اضافہ ہے جیسا کہ اعلیٰ مالیتی کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے بعد دیکھا جارہا ہے لوگوں کی مشکلات میں کمی نہیں ہورہی ہے بلکہ اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے ۔ بینکوں اور اے ٹی ایمز کے سامنے قطاریں مزید طویل ہوتی جارہی ہیں ۔ وزیراعظم نے ان مقاصد میں سے کسی کے بھی حصول کا ارادہ نہیںکیا تھا لیکن یہ کارنامہ ہوگیا ہے اگر یہ اچھی حکمرانی ہے تو ہم سب پر اعتراض کیا جانا چاہیئے ۔ سیتارام یچوری کا یہ ویڈیو ٹوئیٹر پر شائع کیا گیا ہے ۔ حکومت سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی کی یوم پیدائش تقریب ’’ اچھی حکمرانی کا دن ‘‘ کے طور پر منارہی ہے ۔ مارکسسٹ پارٹی کے قائد نے پُرزور انداز میں کہا کہ حکومت کو بہتر حکمرانی کی ضرورت ہے اور اچھی حکمرانی حکومت کے خلاف عوام کی زندگیوں کو بہتر بنانے اور اُن کے مصائب کی یکسوئی میں ناکام ہیں

جب کہ آئندہ سال عنقریب شروع ہوجائے گا لیکن اس میں بھی عوام کے مصائب میں کوئی کمی ہوتی نظر نہیں آتی کیونکہ حکومت کی انتشار کی پالیسیاں تبدیل ہوتی نظر نہیں آتی ۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک چیلنج ہے جس کا ہم سب کو سامنا کرنا ہوگا ۔ جموں سے موصولہ  اطلاع کے بموجب مرکز کی اعلیٰ مالیتی کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کی مہم کو محنت کش طبقہ پر ایک کاری ضرب قرار دیتے ہوئے سی پی آئی (ایم) کی ریاستی شاخ نے آج مرکز کی حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ محنت کش طبقہ دشمن اور کارپوریٹ دوست پالیسیوں پر عمل کررہی ہے ۔ سی پی آئی ایم کے ریاستی جنرل سکریٹری رکن اسمبلی محمد یوسف کریدامی نے کہا کہ مرکزی حکومت محنت کش طبقہ دشمن اور کارپوریٹ دوست پالیسیوں پر عمل پیرا ہے ۔ نوٹوں کی تنسیخ کی مہم سے بی جے پی زیرقیادت مرکزی حکومت نے محنت کشوں پر مصیبت کا پہاڑ لاد دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ خاص طور پر جو افراد اس کا درد محسوس کررہے ہیں ان کا تعلق غیر منظم شعبہ سے ہے ۔

کاشتکار ‘ چھوٹے کاروباری ‘ چھوٹے تاجر اور خوانچہ فروش مصائب میں مبتلا ہے ۔ وہ دو روزہ ریاستی کمیٹی جموں و کشمیر کے اختتامی اجلاس سے خطاب کررہے تھے جو ہندوستانی ٹریڈ یونینوں کے مرکز کی جانب سے منعقد کی گئی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ نوٹوں کی تنسیخ سے صرف اُن افراد کو فائدہ حاصل ہوا ہے جو عوام کا پیسہ لوٹ رہے ہیں اور اپنی جیبیں بھر رہے ہیں کیونکہ وہ سستی شرح سود پر بڑے کارپوریٹ اور کاروباری گھرانوں کو قرض فراہم کررہے ہیں ۔ تریگامی نے پی ڈی پی ۔ بی جے پی مخلوط ریاستی حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ ریاستی عوام کے مصائب کے سلسلہ میں بے حس ہے۔ ریاستی حکومت معاشی پریشانی اور عوام کے مصائب کا کوئی احساس نہیں رکھتی جو وادی کشمیر میں حالیہ بے چینی کے دوران کئی گنازیادہ ہوچکی ہیں  ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT