Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / اہم قوانین کی منظوری کیلئے حکومت کے دباؤ ڈالنے کا امکان

اہم قوانین کی منظوری کیلئے حکومت کے دباؤ ڈالنے کا امکان

ضمنی مطالبات زر( ریلوے) اور دیگر اہم مسودات قانون لوک سبھا میں منظوری کے بعد راجیہ سبھا میں زیرالتواء
نئی دہلی ۔13مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) بجٹ اجلاس کے پہلے حصہ کے صرف تین کام کے دن باقی ہیں ‘ حکومت منصوبہ بنارہی ہے کہ بعض اہم مسودات قانون بشمول بعض اہم بلس کی کامیابی کیلئے دباؤ ڈالے گی ۔ خاص طور پر خبردار کرنے والوں کے تحفظ کے ترمیمی بل 2015ء اور دشمن کی جائیداد ترمیمی اور کارآمد بل 2016ء کی منظوری کیلئے دباؤ ڈالا جائے گا ۔ جائیداد قواعد و ترقیات بل اور آدھار بل حکومت کیلئے بجٹ اجلاس کے تیسرے ہفتہ میں اہمیت رکھتے تھے جس کا آغاز گذشتہ ماہ طوفان خیز انداز میں ہوا تھا ‘ باقی کام کے دنوں میں حکومت کو یہ دیکھنے سے گہری دلچسپی ہے کہ جائیداد بل راجیہ سبھا میں 16مارچ کو منظور کرلیا جائے جب کہ لوک سبھا نے اسے اور آدھار بل کو منظوری دیدی ہے ۔ لوک سبھا سے یہ بلس منظوری کیلئے راجیہ سبھا منتقل کئے جائیں گے ۔ علاوہ ازیں معاشی کاروبار کے پروگرام کے مطابق کارروائی چلانے سے بھی حکومت کو گہری دلچسپی ہے ۔ لوک سبھا میں باقی تین کام کے دنوں میں ضمنی مطالبات زر ( عام ) برائے 2015-16ء پر مباحثہ رائے دہی متعلقہ مطالبات زر کی پیشکش اور منظوری شامل ہیں ۔

قانون سازی کے موضوعات جو ایوان زیرین میں غور کیلئے پیش اور منظوری کیلئے پیش کئے جائیں گے ۔ جائیداد ( قواعد و ترقیات) بل 2015ء دستوری ( درج فہرست ذاتیں ) احکام ( ترمیمی بل 2016) بھی راجیہ سبھا کی منظوری کا منتظر ہے ۔ راجیہ سبھا میں بیورو آف انٹلیجنس بل 2015ء بھی منظوری کیلئے زیرغور ہے جسے لوک سبھا کی منظوری حاصل ہوچکی ہے ۔ علاوہ ازیں ایوان کو راجیہ سبھا میں قومی آبی گذرگاہوں کے بل 2015 کی ترمیمات پر بھی غور کرنا ہوگا جو لوک سبھا میں منظور ہوچکا ہے اور اسے علاقائی مرکز برائے بائیوٹکنالوجی بل 2016ء کے ساتھ پیش کیا جائے گا ۔

علاوہ ازیں راجیہ سبھا میں ریلوے بجٹ پر بھی عام مباحث مقرر ہیں ۔ حکومت منصوبہ بنارہی ہے کہ خبردار کرنے والوں کے تحفظ کے ترمیمی بل ‘ دشمنوں کی جائیداد ترمیمی اور کارکردگی بل 2016‘ دستوری ( درج فہرست ذاتیں) احکام ترمیمی بل 2016 اور انسداد بچہ مزدوری و باقاعدگی ترمیمی بل 2012ء کو مباحث اور منظوری کیلئے پیش کیا جائے ۔ لوک سبھا میں درج فہرست مالیتی کارروائیاں بشمول ریلوے کا مطالبات زر بل 2016ء کے علاوہ بجٹ پر عام مباحث مقرر ہیں ۔ امکان ہے کہ حکومت ان تمام اہم مسودات قانون کی پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں منظوری کیلئے زور دے گی اور اپوزیشن سے اپیل کرے گی کہ اس سلسلہ میں حکومت کے ساتھ تعاون کیا جائے ۔

TOPPOPULARRECENT