Monday , October 23 2017
Home / جرائم و حادثات / ’ ایرانی گینگ ‘ کا سرغنہ اور دیگر گرفتار، 2 کیلو وزنی طلائی زیورات برآمد ، بڑے شہروں میں نیٹ ورک

’ ایرانی گینگ ‘ کا سرغنہ اور دیگر گرفتار، 2 کیلو وزنی طلائی زیورات برآمد ، بڑے شہروں میں نیٹ ورک

حیدرآباد ۔ 22 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : سائبر آباد پولیس نے بدنام زمانہ ایرانی رہزنوں کی ٹولی کو گرفتار کرلیا اور پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ اس ٹولی کی گرفتاری سے 121 مقدمات کا حل جو سال 2015 میں انجام پائے کے علاوہ 68 پرانے مقدمات کی یکسوئی ممکن ہوپائی ہے اور اس ٹولی کے قبضہ سے پولیس نے 2.285 کیلو طلائی زیورات جن کی مالیت 70 لاکھ بتائی گئی ہے کو ضبط کرلیا ۔ کمشنر پولیس سائبر آباد نے بتایا کہ ملکاجگیری کے علاقہ میں تلاشی مہم کے دوران نو تشکیل شدہ اینٹی اسنیاچنگ ٹیم نے اس ٹولی کو گرفتار کرلیا ۔ کمشنر پولیس مسٹر سی وی آنند نے بتایا کہ بدنام زمانہ ایرانی گینگ کے اصل سرغنہ 31 سالہ تقی علی بیدر ، 32 سالہ سلمان علی بیدر اور 25 سالہ اسد اللہ ایرانی عرف چھلالو ناندیڑ کو گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ مردوں کی گرفتاری پر خواتین کے احتجاج اور رکاوٹ کے سبب اس ایرانی گینگ کے خلاف کارروائی میں دشواریاں پیش آئی تھیں تاہم دیگر ریاستوں کی پولیس بہتر تال میل اور سائبر آباد پولیس کے اقدامات سے اس ٹولی کی گرفتاری ممکن ہوپائی ہے ۔ تاہم کمشنر نے بتایا کہ اس ٹولی کا نیٹ ورک ملک کے ان مقامات پر پایا جاتا ہے جہاں ان کے رشتہ دار اور حامی رہتے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ ملک کے 12 بڑے شہروں میں ان کا نیٹ ورک پایا جاتا ہے ۔ جو تقریبا 200 سال قبل ایران سے ہندوستان آئے تھے ۔ سائبر آباد پولیس کے سی سی ایس اور ایس او ٹی کے علاوہ نو تشکیل شدہ اینٹی اسنیاچنگ ٹیموں کی خصوصی دلچسپی سے گرفتاری ممکن ہوپائی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ تقی علی و دیگر ملک کے بڑے شہروں میں وارداتیں انجام دینے کے لیے ہوائی جہاز میں سفر کرتے تھے اور یہاں ایرپورٹ سے نکلنے کے بعد پارکنگ مقامات بالخصوص ریلوے اسٹیشن پہونچ کر پارکنگ میں رکھی ہوئی موٹر سیکل کے ذریعہ شہر بھر میں وارداتیں انجام دیتے تھے ۔ انہیں شہر میں موجودہ افراد ایس ایم ایس کے ذریعہ پارکنگ میں رکھے موٹر سیکلوں کے نمبرات روانہ کردیا کرتے تھے ۔ کمشنر پولیس نے بتایا کہ ہر دن 10 تا 15 وارداتوں کو انجام دینے کے بعد ٹولی غائب ہوجاتی تھی ۔ انہوں نے بتایا کہ اس ٹولی نے سائبر آباد حدود میں 189 وارداتیں انجام دی تھیں اور اس ٹولی کے مزید 6 افراد مفرور ہیں ۔ کمشنر پولیس نے کہا کہ جاریہ سال پولیس کے اقدامات کے سبب 50 فیصد رہزنی کی وارداتوں میں کمی واقع ہوئی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ سال 2013 میں 1018 اور سال 2014 میں 793 اور جاریہ سال 2015 میں ابھی تک صرف 382 رہزنی کی وارداتیں ریکارڈ کی گئیں ۔ سائبر آباد کمشنر نے پولیس عہدیداروں کو ایوارڈز بھی تقسیم کئے ۔۔

TOPPOPULARRECENT