Tuesday , September 26 2017
Home / دنیا / ایران کی تین بندرگاہیں قطر کیلئے پیش

ایران کی تین بندرگاہیں قطر کیلئے پیش

سفارتی تعلقات توڑنے والے ممالک کے شہری ہمارے یہاں رہ سکتے ہیں: قطر
تہران ۔ 11جون ( سیاست ڈاٹ کام ) سعودی عرب سمیت دیگر عرب ممالک کی جانب سے قطر سے سفارتی تعلقات ختم کرنے کے بعد پیدا ہونے والے بحران کے باعث ایران نے قطر کو مدد فراہم کرنے کے لیے اپنے تین بندرگاہیں استعمال کی پیشکش کردی ہیں۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق خلیخی ممالک کے درمیان پیدا ہونے والی حالیہ کشیدگی میں قطر کو الگ تھلگ کیے جانے کے بعد ایران نے مدد فراہم کرنے کی غرض سے اپنے 3 پورٹس دوحہ کو استعمال کرنے کی پیشکش کی ہے۔رپورٹ میں قطر کے وزیر خارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمن الثانی کے حوالے سے کہا گیا ہیکہ دوحہ تمام ضروری اشیادرآمد کرنے کے قابل ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہمیں کامیابی اور ترقی پسندی کے باعث الگ تھلگ کیا گیا۔ہمارا پلیٹ فارم امن کے لیے ہے جنگ کے لیے نہیں۔قطر اپنی تمام ضرورت کے اشیادرآمد کرتا ہے لیکن وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ جن ممالک نے اس پر پابندی لگائی ہے ان سے صرف 16 فیصد کھانے کی اشیادرآمد کی جاتی تھیں۔انھوں نے کہا کہ یہ تمام اشیاقابل تبدیلی ہیں اور انھیں ایک دن میں تبدیل کیا جاسکتا ہے، قطرکے عوام اپنا معیار زندگی ہمیشہ برقرار رکھ سکتے ہیں۔قطر نے کہا ہے کہ حال ہی میں اس سے سفارتی تعلقات توڑنے والے ممالک کے شہری اس کے یہاں رہنے کے لئے آزاد ہیں، انہیں لے کر پالیسیوں میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے ۔ سرکاری خبر رساں ایجنسی کیو این اے نے وزارت داخلہ کے حوالے سے کل کہا کہ قطر سے مکمل یا جزوی طور پر سفارتی تعلقات ختم کرنے والے ممالک کے شہری اس کے یہاں آرام سے رہ سکتے ہیں۔ وزارت کے مطابق ”سفارتی تعلقات توڑنے کے واقعات کے بعد ایسے ممالک کے شہریوں کے لئے ہم نے اپنی پالیسیوں میں کوئی تبدیلی نہیں کی ہے۔
وہ موجودہ قانون کے تحت ہمارے یہاں رہ سکتے ہیں۔ انہیں ملک سے جانے کے لئے نہیں کہا جائے گا”۔ ایجنسی کے مطابق قطر میں دہشت گردی سے متعلقہ لگنے والے تمام الزامات بے بنیاد ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف اس کی جنگ اس سے سفارتی تعلقات ختم کرنے والے ممالک کے مقابلے میں کہیں زیادہ تیز ہے ۔قابل ذکر ہے کہ سعودی عرب، بحرین، مصر، متحدہ عرب امارات، یمن، لیبیا اور مالدیپ نے پیر کو قطر سے سفارتی تعلقات توڑ لئے تھے ۔ ان ممالک نے یہ قدم قطر کی دہشت گرد تنظیموں کی حمایت کرنے اور ایران سے اس کے تعلقات کے سلسلے میں اٹھایا ہے ۔ سب سے پہلے بحرین نے قطر سے اپنے سفارتی تعلقات توڑنے کا اعلان کیا۔ اس کے بعد دیگر ممالک نے سفارتی تعلقات ختم کرنے کا فیصلہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT