Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ایران کے بشمول کئی ممالک تلنگانہ میں سرمایہ کاری کے خواہش مند

ایران کے بشمول کئی ممالک تلنگانہ میں سرمایہ کاری کے خواہش مند

قونصلیٹ جنرل اسلامی جمہوریہ ایران میں عید نوروز ، مئیر و ڈپٹی مئیر جی ایچ ایم سی کا خطاب
حیدرآباد۔21مارچ(سیاست نیوز)قونصلیٹ جنرل اسلامی جمہوری ایران حیدرآباد کے زیراہتمام عید نوروز کا قونصلیٹ دفتر ایران میں شاندار پیمانے پر انعقاد عمل میںآیا۔ ایرانی سفیر برائے حیدرآباد حسین نورین نے نگرانی کی ۔ تقریب میں میئر گریٹر حیدرآباد بنتو رام موہن‘ ڈپٹی میئر بابافصیح الدین‘ سینئر کونسل اسلامی جمہوری ایران علی پریاد کے علاوہ گریٹر حیدرآباد میںمقیم ایرانی باشندوں کی کثیرتعداد نے شرکت کی ۔تقریب کے دوران ایرانی تہذیب تمدن پر مشتمل ڈاکیومنٹری فلم کی بھی نمائش کی گئی اور ایرانی موسیقی کے ذریعہ مندوبین کو محظوظ کیا گیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے قونصلیٹ جنرل اسلامی جمہوری ایران حسن نوریان نے ریاست تلنگانہ میں ایرانی شہریوں کی والہانہ استقبال کی ستائش کرتے ہوئے حکومت تلنگانہ کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہاکہ علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے بعد شہر حیدرآباد سرمایہ کاری کے لئے ایک موزوں مقام بن گیا ہے ۔ ایران کے بشمول دنیا کے کئی ممالک تلنگانہ بالخصوص شہر حیدرآباد میںسرمایہ کاری کے خواہش مند ہیں اورحکومت تلنگانہ کی جانب سے انہیں مکمل تعاون بھی مل رہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ایران اور حیدرآباد کا قدیم رشتہ ہے اور اس رشتے کو حکومت تلنگانہ نے اپنے رویہ سے مزید مستحکم اور طاقتور بنایاہے۔حسن نورایان نے گریٹر حیدرآباد کے مئیر اور ڈپٹی میئر دونوں کو ایرانی سفارت خانہ برائے حیدرآباد اور ایرانی عوام کی جانب سے مبارکباد پیش کی ۔ مئیر گریٹر حیدرآباد بنتو رام موہن نے ایرانی عوام کو عید نوروزکی مبارکباد پیش کی اورکہاکہ حیدرآباد اور ایران کی مشترکہ تہذیب کا سنگ میل حیدرآباد کی بریانی اور ایرانی چائے ہے۔ ایران او رحیدرآباد کے درمیان کا رشتہ آج کا نہیں بلکہ چار سوسال قدیم ہے ۔ بنتو رام موہن نے کہاکہ آج بھی ایران کے کئی طلبہ عثمانیہ ‘ ایفلو اور مولانا آزاد نیشنل یونیورسٹی میںتعلیم حاصل کررہے ہیں اور کئی ایک ایرانی شہریوں کو حیدرآباد میںتجارت کرنے کا موقع فراہم کیاگیا ہے ۔ محمد بابافصیح الدین نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ دنیا بھر میںحیدرآباد کی مقبولیت چارمینار‘ شیروانی ‘بریانی ‘ ایرانی حلیم اور ایرانی چائے کی وجہہ سے ہے ۔ چارمینار کی تعمیر ایرانی فن تعمیرات سے متاثر ہوکر کی گئی ہے ۔ انہوں نے مزیدکہاکہ حیدرآباد آنے والاکوئی بھی سیاح یہاں کی بریانی ‘ حلیم اور ایرانی چائے کا ذائقہ چکھے بغیر نہیں جاسکتا ۔ گریٹر حیدرآباد میںہوٹل تجارت کو فروغ دینے میںایرانی تاجروں نے اہم رول ادا کیا ہے ۔ مستقبل میںبھی حکومت تلنگانہ کی جانب سے ایرانی تاجرین کو مکمل تعاون فراہم کرنے کا بھی بابا فصیح الدین نے وعدہ کیا۔انہوں نے کہاکہ چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو سنہری تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے خواب کو شرمندہ تعبیر بنانے کے لئے ایرانی تاجرین کو آگے آنے کی ضرورت ہے ۔ بابا فصیح الدین نے سرمایہ کاری کے لئے سرخ قالین کے ذریعہ استقبال کرنے کا اعلان کیا۔قبل ازیں مئیراور ڈپٹی میئر گریٹر حیدرآباد کو ایرانی سفیر حسن نورایان کی جانب سے تہنیت بھی پیش کی گئی۔

TOPPOPULARRECENT