Tuesday , October 24 2017
Home / دنیا / ایران کے میزائیل فنڈ میں اضافہ منظور

ایران کے میزائیل فنڈ میں اضافہ منظور

نئی امریکی تحدیدات پر ردعمل ‘ کلورین کے اخراج سے سینکڑوں متاثر
تہران ۔13اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) ایرانی پارلیمنٹ نے آج میزائل کی تیاری کے پروگرام کیلئے 52 کروڑ امریکی ڈالر مختص کردیئے ‘ تاکہ امریکہ کی مہم جوئی اور تحدیدات سے مقابلہ کیا جائے اور ملک کے پاسداران انقلاب کی بیرون ملک کارروائیوں میں اضافہ کیا جاسکے ۔ امریکی شہریوں کو جان لینا چاہیئے کہ یہ ہماری پہلی کارروائی ہے ۔ اسپیکر علی لاری جانی نے زبردست اکثریت کی تائید سے اس پیاکیج کا اعلان کرتے ہوئے جو اس علاقہ میں امریکہ کیجانب سے دہشت گردی اور مہم جوئی پر مبنی تحدیدات کے انسداد کیلئے ایرانی کارروائی کا اعلان کیا گیا ۔ قانون کی تائید میں 240 ارکان پارلیمان نے ووٹ دیا ‘ جبکہ پارلیمنٹ میں 244ارکان حاضر تھے ۔ امریکہ کی جانب سے جولائی میں ایران پر اس کے میزائل پروگرام کونشانہ بناتے ہوئے تازہ تحدیدات پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے یہ قانون منظور کیا گیا ہے ۔ وزارت خارجہ حکومت ان کارروائیوں کا ایک حصہ ہیں اور اس قانون کی تائید میں ہے ۔ ایک کمیٹی کی گئی ہے تاکہ امریکی کانگریس کے منظور کردہ قانون کا مقابلہ کیا جائے ۔ وزیر خارجہ ایران عباس عرق چی نے اس کا اعلان کرتے ہوئے 2015ء کے عالمی طاقتوں کے ساتھ معاہدہ کیا حوالہ دیا ‘ جس کے تحت حکومت ایران کو حق حاصل ہے کہ وہ اپنے میزائل پروگرام کیلئے مزید 26 کروڑ امریکی ڈالر منظور کرسکیں ۔ وزیر خارجہ نے انتخابی نتائج کا اعلان کیا جب کہ ارکان پارلیمنٹ ’’ مرگ بر امریکہ ‘‘کے نعرے لگارہے تھے ۔ دریں اثناء سرکاری ٹی وی کی اطلاع کے بموجب 300 افراد امراض تنفس کا شکار ہوگئے ۔ جب کہ بچوں میں کلورین کیاخراج سے متاثر ہونے کی شکایت کی ۔ اتوار کے دن مقامی اخبارات نے خبر شائع کی ہے کہ دارالحکومت تہران کے جنوب مغرب میں 805کلومیٹر کے فاصلے شہر ڈیزپُل کے ایک مقامی اسپتال سے کلورین گیاس کا اخراج ہوا ۔ جس کی وجہ سے 30 افراد کا دواخانہ میں شریک کر کے علاج کیا گیا ۔خبر کے بموجب مقامی سربراہ آب کمپنی کے متروکہ گودام سے کلورین گیاس کا اخراج ہوا تھا ۔ ڈیزپُل کی آبادی ڈھائی لاکھ ہے اور یہ صوبہ خوزستان کے تیل سے مالا مال علاقہ میں واقع ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT