Sunday , August 20 2017
Home / دنیا / ایران 8ارب ڈالرہندوستانی سرمایہ کاری کا خواہاں

ایران 8ارب ڈالرہندوستانی سرمایہ کاری کا خواہاں

مغربی تحدیدات کی برخواستگی پر سطحی مذاکرات میں وقت ضائع نہ کرنے کا مشورہ

تہران۔26جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان سے ایران پر عائد تحدیدات کی برخواستگی کی مدت سے استفادہ کرتے ہوئے ایران نے ہندوستان کو دعوت دی ہے کہ وہ تقریباً 8ارب امریکی ڈالر سرمایہ کاری اس کے انفراسٹرکچر پراجکٹس میں کرے اور اس کیلئے ’’سطحی مذاکرات‘‘ میں وقت ضائع نہ کرے ۔ ایران کو ایک قابل اعتبار شراکت دار قرار دیتے ہوئے ایران کے سفیر غلام رضا انصاری نے کہا کہ ہندوستان کو مغربی ممالک کی جانب سے سرمایہ کاری کے آغاز سے پہلے کی مدت سے استفادہ کرتے ہوئے سرمایہ کاری فوری فیصلہ کرناچاہیئے ۔ آئندہ تین تا پانچ ماہ میں ایران پر عائد مغربی تحدیدات برخواست کردی جائیں گی ۔ ہندوستان ہمیشہ سے مشکل اوقات میں ایران کا مددگار رہا ہے ۔ جبکہ ایران پر مغربی ممالک کی تحدیدات عائد تھیں اس لئے اُس کو تحدیدات کی برخواستگی کے فوری بعد ایران کے انفراسٹرکچر میں سرمایہ کاری کے موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ضائع ہوجانے والے وقت کی پابجائی کرنی چاہیئے ۔ اُس کو سطحی بات چیت میں اپنا وقت ضائع نہیں کرنا چاہیئے ۔

روس کے شہر اوفا میں جاریہ ماہ کے اوائل میں شنگھائی تعاون تنظیم چوٹی کانفرنس کے دوران علحدہ طور پر ملاقات کے دوران صدر ایران حسن روحانی نے ہندوستان کو دفاعی انفراسٹرکچر پراجکٹس بشمول بندرگاہوں ‘ ریلویز ‘ قومی شاہراہوں وغیرہ میں سرمایہ کاری کی دعوت دی ہے جس کی مالیت8ارب امریکی ڈالر ہوسکتی ہے ۔ وزیراعظم ہندوستان نریندر مودی کا رویہ اس سلسلہ میں مثبت تھا لیکن جب ایران کے سفیر نے اس تیقن پر عمل آوری کیلئے اُن سے ربط پیدا کرنا چاہا تو ایسا ممکن نہ ہوسکا ۔ چنانچہ ایرانی سفیر برائے ہند نے کہا کہ ہندوستان کو سطحی مذاکرات اور سودے بازی میں اپنا وقت ضائع نہیں کرنا چاہیئے بلکہ فوری فیصلہ کرتے ہوئے مثبت پیشرفت کرنا چاہیئے ۔  انہوں نے کہا کہ مودی حکومت کی توجہ حکومت ایران کی پالیسی  کے ساتھ ہندوستان کو جوڑنے پر مرکوز ہے چنانچہ ایران نے بھی ہندوستان سے سرمایہ کاری خواہش کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT