Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ایس ایس سی امتحان میں نقل نویسی روکنے اقدامات

ایس ایس سی امتحان میں نقل نویسی روکنے اقدامات

تمام مراکز امتحان پر سی سی ٹی وی کیمرے لگانے ہائی کورٹ کی ہدایت
حیدرآباد ۔ 12 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : حیدرآباد ہائی کورٹ کی ڈیویژن بنچ نے تلنگانہ اور آندھرا پردیش کی حکومتوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ عدالت کو بتائیں کہ ایس ایس سی امتحانات میں نقل نویسی روکنے کے لیے مراکز امتحان پر سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے کے لیے کس قدر فنڈس مختص کیے جائیں گے ۔ عدالت نے کہا کہ آئندہ سال جنوری کے ختم تک سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب کا کام ہوجانا چاہئے ۔ بنچ نے کہا کہ ہم نقل نویسی روکنے کے اقدامات کے بارے میں فکر مند ہیں ۔ کارگذار چیف جسٹس دلیپ بی بھوسلے اور جسٹس پی نوین راؤ نے ایلورو ضلع مغربی گوداوری کے جی سرینواس کی درخواست کی سماعت کرتے ہوئے یہ ہدایت دی ۔ درخواست گذار نے شکایت کی کہ حکام نے نقل نویسی روکنے کے لیے موثر اقدامات نہیں کئے ۔ بنچ نے اصرار کیا کہ دونوں ریاستوں میں تمام مراکز امتحانات پر سی سی ٹی وی کیمرے لگائے جانے چاہئے ۔ تلنگانہ حکومت کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب کے لیے 36 کروڑ روپئے کی ضرورت ہوگی ۔ آندھرا پردیش حکومت کے وکیل نے کہا کہ ان کی ریاست مالیاتی بحران سے دوچار ہے اور اتنی رقم خرچ کرنے کے موقف میں نہیں ہے ۔ درخواست گذار کے وکیل ایس نرنجن ریڈی نے کہا کہ حکومت ریاستی بجٹ کا دس فیصد بھی تعلیم کے شعبہ پر خرچ نہیں کررہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نقل نویسی کی وجہ سے میرٹ طلبہ بری طرح متاثر ہورہے ہیں ۔ بنچ نے کہا کہ تعلیم کے معیار کو یقینی بنانے کے لیے 36 کروڑ روپئے کوئی بڑی رقم نہیں ہے ۔ بنچ نے کہا کہ سی سی ٹی وی کیمرے لگائے جانے کے بعد فیس باز ادائیگی پر خرچ کی جانے والی رقم بھی کم ہوجائے گی ۔ عدالت نے کہا کہ سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب سے طلبہ تعلیم پر توجہ کریں گے ۔ سماعت دو ہفتوں کے لیے ملتوی کی گئی ۔۔

TOPPOPULARRECENT