Wednesday , May 24 2017
Home / کھیل کی خبریں / ایشیاء کپ ویمنس کرکٹ ٹورنمنٹ میں ہندوستان کے ہاتھوں پاکستان کو شکست

ایشیاء کپ ویمنس کرکٹ ٹورنمنٹ میں ہندوستان کے ہاتھوں پاکستان کو شکست

متالی راج کی جارحانہ بیٹنگ ، 73 ناٹ آؤٹ ، ہندوستان کی ڈبل ہیٹ ٹرک

بنکاک ۔ /4 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی خاتون کرکٹرس نے چھٹویں خطابی مقابلے میں بھی اپنے کٹر حریف ملک پاکستان کو شکست دے کر ایشیاء کپ پر اپنی سبقت و بالادستی برقرار رکھی ۔ سینئر کھلاڑی مقامی راج نے جنہیں اب ٹورنمنٹ کے آغاز سے قبل ٹی ۔ 20 کی کپتانی سے ہٹادیا گیا تھا ۔ 73 رن بناکر ناٹ آوٹ رہتے ہوئے ہندوستانی ٹیم کو 20 اوورس میں پانچ وکٹ کے نقصان سے 121 رن بنانے میں غیر معمولی مدد کی ۔ بعد ازاں ہندوستانی لڑکیوں نے انتہائی نپی تکی بولنگ کرتے ہوئے پاکستان کو چھ وکٹ کے نقصان سے صرف 104 رن بنانے تک محدود رکھا اور 17 رن سے شاندار فتح حاصل کی ۔ بائیں ہاتھ کی اسپنر ایکتا بشٹ نے بہترین بولنگ کی ۔ انہوں نے چار اوورس میں 22 رن دے کر دو وکٹ حاصل کیا ۔ یہ دوسرا موقع ہے کہ ہندوستان کو اس مقابلہ میں پاکستان پر برتری حاصل ہوئی ۔ قبل ازیں لیگ میچ میں ہندوستانی ویمنس کرکٹرس نے پاکستانی لڑکیوں کو پانچ وکٹس سے شکست دی تھی ۔ علاوہ ازیں فائینل میں رسائی سے قبل کھیلے گئے پانچ مقابلوں میں بھی ہندوستانی ٹیم کو کوئی شکست نہیں ہوئی تھی ۔ یہ کامیابی ہندوستان کیلئے پاکستان کے خلاف ایک انتقام بھی سمجھی جارہی ہے ۔ کیونکہ مارچ کے دوران ہندوستان میں کھیلے گئے ورلڈ ٹی ۔ 20 میں میزبان ٹیم کو پاکستان کے ہاتھوں شکست ہوگئی تھی  ۔ ہندوستان نے آج کی اس یادگار کامیابی کے ساتھ ایشیائی براعظم میں اب تک کھیلے گئے حالیہ میچں میں اپنی سبقت و کامیابیوں کا ایک ریکارڈ بھی برقرار رکھا جس کو ایشیاء کپ کیلئے تاحال کھیلے گئے تمام چھ مقابلوں میں کامیابی حاصل ہوئی ہے ۔ تاہم 2004 ء میں شروع ہوئے ایشیاء کپ کے ابتدائی چار میچ  50 اوورس کے ٹورنمنٹ کھیلے گئے تھے ۔ مابعد کے دو مقابلے 20 اوورس کے ٹورمنٹ کھیلے گئے ۔ گورنگ ژہو میں 2012 ء کے دوران کھیلے گئے مقابلوں میں ہندوستان نے فائینل میں پاکستان کو شکست دے کر ٹروفی پر قبضہ بھی کرلیا ہے ۔ تاہم متالی راج اور بشٹ کی شاندار مساعی شامل نہ ہوتی تو چمپئین ٹیم اپنی  جیت کا سلسلہ نہیں دہرا سکتی تھی ۔ متالی راج اپنی ٹیم کی شاندار فتح میں کلیدی رول ادا کی ہیں جو چار اننگز میں 220 رن بنائی ہیں ۔ وہ اس ٹورنمنٹ میں سب سے زیادہ رن بنانے والی کھلاڑی بھی ہیں ۔ پاکستان کی جویریہ خاں کو دوسرا مقام حاصل ہے جو چھ اننگز میں 128 رن بنائی ہیں ۔ متالی اپنی ٹیم کو کامیابی سے ہمکنار کرنے کیلئے دو انتہائی پرکشیدہ کھیلوں میں بھی پرسکون رہیں  ۔ ان کا 73 ناٹ آؤٹ ، اس ٹورنمنٹ کا سب سے زیادہ انفرادی اسکور بھی رہا ۔ متالی نے 112 کا اسٹرائیک ریٹ سے رن بنایا ۔ ان کے اسکور میں ایک چھکہ اور سات چوکے شامل ہیں ۔ 34 سالہ متالی نے اپنے کھیل کے مظاہرہ سے ثابت کردیا کہ کپتانی سے ہٹائے جانے کے باوجود ٹی ۔ 20 ٹورنمنٹ میں کھیلنے کیلئے ان کے پاس ہنوز بہت کھیل باقی ہے ۔ متالی کے بجائے ہرمن پریت کو کپتان بنایا گیا ہے ۔ لیکن نئی کپتان کا آل راؤنڈ مظاہرہ مایوس کن رہا ۔ کور چھ اننگز میں بمشکل 30 رن بنا پائیں اور صرف دو وکٹس حاصل ہوئے ۔ بائیں ہاتھ کے اسپنر بشٹ ، ہندوستان کیلئے بہترین ثابت ہوئیں ۔ وہ چھ اننگز میں 5.20 کے اوسط سے 10 وکٹس حاصل کرتے ہوئے کامیاب بولر کی حیثیت سے ابھری ہیں ۔ بشٹ نے دیگر بولرس کے ساتھ اس بات کو یقینی بنادیا کہ پاکستان ، کامیابی کے ہدف کے قریب پہونچنے نہ پائے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT