Monday , August 21 2017
Home / ہندوستان / ایل ٹی سی اسکام میں ملوث ہونے کی تردید

ایل ٹی سی اسکام میں ملوث ہونے کی تردید

سی بی آئی تحقیقات پر جنتا دل متحدہ کے ایم پی کا ردِ عمل
پٹنہ۔/15اپریل، ( سیاست ڈاٹ کام ) ایل ٹی سی اسکام میں دھوکہ اور کرپشن کے الزامات کی تحقیقات کیلئے سی بی آئی کو منظوری حاصل ہونے کے بعد جنتا دل متحدہ کے راجیہ سبھا ایم پی مسٹر انیل ساہنی نے آج نہ صرف الزامات کی تردید کی ہے بلکہ استعفیٰ دینے سے انکار کردیا، اور کہا کہ یہ میرے خلاف ایک سازش ہے اور اخلاقی بنیادوں پر استعفیٰ کیوں دوں جبکہ میں نے کوئی غلط کام نہیں کیا ہے۔ قبل ازیں راجیہ سبھا کے صدرنشین حامد انصاری نے جنتا دل متحدہ کے ایم پی انیل ساہنی سے پوچھ تاچھ کیلئے سی بی آئی کو اجازت دے دی تھی جن کے خلاف ایجنسی نے ایل ٹی سی اسکام میں مبینہ دھوکہ دہی اور دھاندلیوں کے ارتکاب پر ایک چارج شیٹ پیش کیا تھا۔ بہار سے وابستہ ایم پی، ایوان بالا کے پہلے رکن ہوں گے صدر نشین کی جانب سے منظوری حاصل ہونے پر سی بی آئی ان سے پوچھ تاچھ کرے گی۔ تاہم راجیہ سبھا رکن نے کہا کہ ہتک عزت کا مقدمہ دائر کرنے کیلئے وکلاء سے مشاورت کریں گے، اور یہ الزام عائد کیا کہ انہیں ریاکٹ کا شکار بنادیا گیا ہے جوکہ ارکان پارلیمنٹ کیلئے ایل ٹی سی کے فرضی بلز کی تیاری سے متعلق ہے۔ انیل ساہنی نے یہ ادعا کیا کہ 2013ء میں انہوں نے شکایت کی تھی کہ ان کے نام پر فرضی بلز داخل کئے گئے ہیں لیکن کوئی توجہ نہیں دی گئی۔

TOPPOPULARRECENT