Tuesday , June 27 2017
Home / Top Stories / ایمان احمد سیفی ہاسپٹل سے آج ڈسچارج ہوں گی

ایمان احمد سیفی ہاسپٹل سے آج ڈسچارج ہوں گی

ابوظہبی ہاسپٹل منتقلی، موٹاپے میں نمایاں کمی، ارکان خاندان سے کوئی رقم نہیں لی گئی: انتظامیہ

ممبئی۔3 مئی (سیاست ڈاٹ کام) مصر کی شہری ایمان احمد جنہیں اب تک دنیا کی سب سے زیادہ وزنی خاتون سمجھا جاتا تھا، کل سیفی ہاسپٹل سے ڈسچارج کیا جائے گا۔ یہاں وہ موٹاپے کے سلسلہ میں زیر علاج تھیں۔ سیفی ہاسپٹل میں ایمان کا علاج کرنے والی ٹیم کی قیادت ڈاکٹر مظفل لکڑاوالا کررہے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ مریضہ کو جاریہ سال فروری میں جس وقت ہاسپٹل لایا گیا ان کا وزن تقریباً 498 کیلوگرام تھا اور اب کم کرتے ہوئے اسے 177 کیلوگرام تک پہنچادیا گیا ہے۔ سیفی ہاسپٹل کے سی او او حذیفہ شہابی نے بتایا کہ انہیں ابوظہبی کے وی پی ایس برجیل ہاسپٹل سے ای میل موصول ہوا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ سیفی کی صحت بہتر اور وہ فضائی سفر کرسکتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سیفی کو کل 10:30 بجے صبح ڈسچارج کردیا جائے گا۔ ہاسپٹل کی ٹیم وی پی ایس برجیل ہاسپٹل کی ٹیم کو ایمان کی کیفیت کے بارے میں تفصیلات سے واقف کرائے گی۔ 36 سالہ ایمان اپنی بہن شائمہ سالم کے ساتھ یہاں موجود ہیں اور مزید علاج کے لیے انہیں وی پی ایس برجیل ہاسپٹل منتقل کیا جارہا ہے۔ شائمہ نے گزشتہ ہفتے یہ الزام عائد کیا تھا کہ سیفی ہاسپٹل میں ان کی بہن کا موثر علاج نہیں ہورہا ہے۔ سیفی ہاسپٹل کے ذرائع نے بتایا کہ ایمان کے علاج پر تقریباً 3 کروڑ روپئے کے مصارف آئے اور ہاسپٹل کو اب تک 65 لاکھ روپئے ہندوستانیوں کی جانب سے عطیہ کی شکل میں موصول ہوئے۔ ڈاکٹر مظفل لکڑوالا نے کہا کہ ہم نے اب تک ایمان کے ارکان خاندان سے ایک پیسہ بھی طلب نہیں کیا۔ ہمیں خوشی اس بات کی ہے کہ ان کا وزن کافی کم ہوچکا ہے۔ ایمان کی بہن نے آن لائین ویڈیو میں یہ الزام بھی عائد کیا تھا کہ سیفی ہاسپٹل میں ان کی بہن کے وزن میں کمی کے تعلق سے جھوٹا دعوی کیا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT