Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / ایمنسٹی انٹرنیشنل کے خلاف قوم دشمن نعرہ بازی کا الزام

ایمنسٹی انٹرنیشنل کے خلاف قوم دشمن نعرہ بازی کا الزام

بنگلورو میں اے بی وی پی کا احتجاجی مظاہرہ، متنازعہ واقعہ کی پولیس تحقیقات
بنگلورو۔/16اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) بنگلورو میں کشمیر پر ایمنسٹی انٹرنیشنل کے پروگرام کی ویڈیو فلم کے ذریعہ ان لوگوں کی نشاندہی کی جارہی ہے جنہوں نے کل یہاں قوم دشمن نعرے بلند کئے تھے۔ پولیس کی جانب سے ایک غیر سرکاری تنظیم ( این جی اوز ) کے خلاف کیس درج کئے جانے کے بعد اے بی وی پی کارکنوں نے آج احتجاجی مظاہرہ کیا۔ تاہم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے آر ایس ایس کی طلباء تنظیم اے وی بی پی کے الزامات کو مسترد کردیا اور یہ ادعا کیا کہ اس کے کسی ملازم نے قوم دشمن نعرے بلند نہیں کئے۔ اے بی وی کارکن آج احتجاجی مظاہرہ کے دوران پولیس کے ساتھ متصادم ہوگئے ، یہ مطالبہ کیا کہ ہفتہ کے دن ایک مذاکرہ میںہندوستان اور فوج کے خلاف نعرہ بازی کرنے والوں کو فی الفور گرفتار کرلیا جائے اور حقوق انسانی کی بین الاقوامی تنظیم ایمنسٹی انٹر نیشنل کے خلاف بھی کارروائی کی جائے۔ یہ پروگرام ایمنسٹی انٹرنیشنل نے جموں و کشمیر میں حقوق انسانی کی پامالی کا شکار افراد کیلئے انصاف کے مطالبہ پر مہم کے سلسلہ میں منعقد کیا تھا۔ دریں اثناء پولیس نے ایمنسٹی انٹر نیشنل انڈیا کے خلاف کیس درج کرلیا ہے اور علحدگی پسند تحریک کے حامیوں کی نشاندہی کیلئے ویڈیو اور سی سی ٹی وی کلپنگ کی جانچ کی جارہی ہے جنہوں نے پروگرام میں آزادی کشمیر کے حق میں نعرے بلند کئے تھے۔

کرناٹک کے وزیر داخلہ جی پرمیشور نے آج میڈیا کو یہ اطلاع دی لیکن انہوں نے ایمنسٹی انڈیا کے ایکزیکیٹو ڈائرکٹر اکارپٹیل کی گرفتاری کے امکانات پر لب کشائی سے انکار کردیا۔ قبل ازیں اے بی وی پی کارکنوں نے کل پولیس میں شکایت کے بعد ایک ویڈیو سی ڈی پیش کی جس میں ہند مخالف نعرے بلند کرنے والوں کو فلمبند کرلیا گیا ہے۔ دریں اثناء ایمنسٹی انڈیا نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اے بی وی پی نے بغیر کسی ٹھوس ثبوت کے الزامات عائد کیا ہے جبکہ تنظیم نے جموں و کشمیر میں حقوق انسانی کی پامالی اور ناانصافی پر ایک مذاکرہ کا اہتمام کیا تھا اور یہ ادعا کیا گیا ہے کہ تنظیم کے کسی ملازم نے کوئی قابل اعتراض نعرہ نہیں لگایا ہے جبکہ اے بی وی پی نے یہ الزام عائد کیا کہ ہندوستانی کشمیر کو پاکستان سے جوڑنے کے مطالبہ پر نعرہ بلند کیا گیا ہے۔ چیف منسٹر سدا رامیا نے بتایا کہ پولیس نے مذکورہ واقعہ پر بغاوت کا ایک کیس درج کرلیا ہے ، بعد تحقیقات قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ جبکہ بی جے پی لیڈر اور سابق چیف منسٹر بی ایس یڈیوراپا نے کہا کہ محب وطن اور قوم پرست لوگ ہند مخالف نعروں کو ہرگز برداشت نہیں کریں گے۔ انہوں نے بتایاکہ جواہر لعل نہرو یونیورسٹی میں پیش آئے واقعہ کو بنگلور میں دوہرایا گیا ہے جسے فی الفور روک دینا ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT