Monday , September 25 2017
Home / Top Stories / ایم ایل سی نشستوں کی رائے دہی منسوخ

ایم ایل سی نشستوں کی رائے دہی منسوخ

امیدواروں کی تصاویر میں اُلٹ پھیرکے سبب19 مارچ کو دوبارہ ووٹنگ

حیدرآباد۔ 9 مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ قانون ساز کونسل کے حلقہ اساتذہ حیدرآباد، رنگاریڈی و محبوب نگر ایم ایل سی کیلئے آج منعقدہ رائے دہی کو منسوخ کردیا گیا اور اس طرح حلقہ اساتذہ حیدرآباد رنگاریڈی و محبوب نگر ایم ایل سی کیلئے انتخابات کیلئے 19 مارچ بروز اتوار دوبارہ رائے دہی عمل میں لائی جائے گی۔ ریاستی چیف الیکٹورل آفیسر کے باوثوق ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ حلقہ اساتذہ حیدرآباد ، رنگاریڈی و محبوب نگر ایم ایل سی نشست کیلئے آج صبح 8 بجے سے رائے دہی کا آغاز ہوا تھا لیکن کافی تاخیر سے بیالٹ پیپر میں امیدواروں کی تصاویر کے اُلٹ پھیر ہونے کا پتہ چلا جبکہ امیدوار لکشمیا کی تصویر کے بازو ایک اور امیدوار مانک ریڈی کا نام پرنٹ ہوگیا جس کے خلاف ایم ایل سی نشست کیلئے مقابلہ کرنے والے مختلف امیدواروں نے بیالٹ پیپر میں پیش آئی غلطی سے فوری طور پر چیف الیکٹورل آفیسر تلنگانہ بھنور لعل کو واقف کرایا اور امیدواروں کی جانب سے موصولہ شکایت پر فی الفور کارروائی کرتے ہوئے بھنور لعل نے حلقہ اساتذہ حیدرآباد، رنگاریڈی و محبوب نگر ایم ایل سی انتخاب میں پیش آئی فاش غلطی سے چیف الیکشن کمیشن نئی دہلی کو واقف کروایا۔ بتایا جاتا ہے کہ بھنور لعل نے اپنی پیش کردہ رپورٹ میں مرکزی الیکشن کمیشن کو مکمل تفصیلات سے واقف کروایا۔ چیف الیکٹورل آفیسر کو روانہ کردہ رپورٹ کی روشنی میں مرکزی الیکشن کمیشن (چیف الیکشن کمیشن) نے آج مذکورہ حلقہ اساتذہ ایم ایل سی نشست کیلئے ہوئی رائے دہی کو منسوخ کرتے ہوئے 19 مارچ کو مکمل حلقہ میں دوبارہ رائے دہی منعقد کروانے کی چیف الیکٹورل آفیسر تلنگانہ کو ہدایت دی۔ اس ہدایت کی روشنی میں ہی حلقہ اساتذہ حیدرآباد، رنگاریڈی اور محبوب نگر ایم ایل سی انتخاب کیلئے 19 مارچ کو حسب سابق اوقات کے مطابق رائے دہی منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT