Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / ایم پدمنابھم کی غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال کا آغاز

ایم پدمنابھم کی غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال کا آغاز

ریزرویشن کے مسئلہ کو تین ماہ میں حل کرنے کاپو قائد کا مطالبہ
حیدرآباد ۔ 5 ۔ فروری : ( پی ٹی آئی ) : سابق وزیر اور کاپو قائد ایم پدمنابھم نے کاپو طبقہ کو بیاک ورڈ کلاسیس کے زمرہ میں شامل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے آج آندھرا پردیش کے ضلع مشرقی گوداوری میں ان کی اہلیہ کے ہمراہ غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال شروع کی ۔ پدمنابھم نے ، اس مطالبہ کی حمایت میں جن کا احتجاج چند روز قبل تشدد میں تبدیل ہوگیا تھا ، ضلع مشرقی گوداوری میں ان کے آبائی گاؤں کرلمپوڈی میں بھوک ہڑتال شروع کی ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ کاپو طبقہ کو ریزرویشن فراہم کرنے کے مسئلہ کو تین ماہ میں حل کیا جائے اور اس طبقہ کی فلاح و بہبود کے لیے سالانہ ایک ہزار کروڑ روپئے فراہم کئے ہیں ۔ انہوں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ گذشتہ اتوار کو منعقدہ کاپو گرجنا میں ہوئے پر تشدد واقعات کے سلسلہ میں کاپو طبقہ کے ارکان کے خلاف جھوٹے کیسیس درج نہ کئے جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ تشدد کی سی بی آئی انکوائری کے لیے حکم دیا جائے جس میں ایک ٹرین ، ایک پولیس اسٹیشن اور سرکاری اور خانگی گاڑیوں کو جلایا گیا ۔ پدمنابھم کی بھوک ہڑتال کے پیش نظر ضلع مشرقی گوداوری میں کرلمپوڈی اور دیگر مواضعات میں سیکوریٹی کے معقول انتظامات کئے گئے ہیں ۔ حکمران تلگو دیشم پارٹی کے دو ارکان اسمبلی توٹا تریمبورتولو اور بی اوما مہیشور راؤ نے جو کاپو طبقہ سے تعلق رکھتے ہیں اس مسئلہ کو ختم کرنے کی کوشش میں کل رات پدمنابھم سے بات چیت کی ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ انہوں نے کاپو ارکان اسمبلی کے ناطے انفرادی طور پر پدمنابھم سے ملاقات نہ کہ حکومت کے نمائندوں کی حیثیت سے ۔۔

TOPPOPULARRECENT