Friday , August 18 2017
Home / سیاسیات / ایم پیز ‘ چیف منسٹر یو پی سے مدد نہ مانگیں

ایم پیز ‘ چیف منسٹر یو پی سے مدد نہ مانگیں

حکام کے تبادلوں و تعیناتی میں مداخلت نہ کی جائے ‘ نریندر مودی
نئی دہلی 23 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر اعظم نریندر مودی نے اترپردیش سے تعلق رکھنے والے بی جے پی ارکان پارلیمنٹ کو ہدایت دی ہے کہ وہ عہدیداروں کے تبادلوں اور تعیناتی میں چیف منسٹر آدتیہ ناتھ سے مدد نہ مانگیں۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ کو بہتر حکمرانی پر توجہ مرکوز کرنے کا موقع دیا جانا چاہئے ۔ یو پی کے ارکان پارلیمنٹ سے ناشتہ پر ملاقات کرتے ہوئے مودی نے انہیں بی جے پی کی اسمبلی انتخابات میں شاندار کامیابی کیلئے اہم رول ادا کرنے پر ان ارکان پارلیمنٹ سے اظہار تشکر کیا اور ان سے کہا کہ وہ ریاست میں تبدیلی لانے پارٹی ارکان اسمبلی کے ساتھ ایک ٹیم کی طرح کام کریں۔ اجلاس میں موجود ایک رکن پارلیمنٹ نے بتایا کہ نریندرمودی نے کہا کہ ریاست کے بی جے پی ارکان پارلیمنٹ اور اسمبلی کو مل کر ٹیم کی حیثیت میں کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ وزیر اعظم نے یہ بھی واضح کردیا کہ ہمیں سخت محنت کرنے کیلئے عوام کی تائید حاصل ہوئی ہے عیش و آرام کرنے کیلئے نہیں۔ وزیر اعظم نے اجلاس میں ارکان پارلیمنٹ سے کہا ہے کہ انہیں عہدیداروں کے تبادلوں یا تعیناتی کیلئے یوگی آدتیہ ناتھ یا کسی اور سے رجوع نہیں ہونا چاہئے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ان کی پارٹی کو عوام کی خدمت کیلئے عوام کی تائید حاصل ہوئی ہے اور پارٹی چاہتی ہے کہ عوام کو کرپشن سے پاک حکومت فراہم کی جائے ۔ مودی نے آج ارکان پارلیمنٹ کو اپنی قیامگاہ پر ناشتہ پر مدعو کیا تھا جس میں پارٹی کے صدر امیت شاہ ‘ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ ‘ پارلیمانی امور کے وزیر اننت کمار اور سینئر پارٹی لیڈر مرلی منوہر جوشی بھی موجود تھے ۔ مودی نے اسمبلی انتخابات میں شاندار کامیابی پر ارکان پارلیمنٹ کو مبارکباد پیش کی ۔

TOPPOPULARRECENT