Friday , August 18 2017
Home / دنیا / این ایس جی میں ہندوستان کی رکنیت اور اظہرمسعود پر امتناع پر چین کا اٹل موقف

این ایس جی میں ہندوستان کی رکنیت اور اظہرمسعود پر امتناع پر چین کا اٹل موقف

نئی دہلی کی تائیدسے گریز، صدر ژی کی آج آمد سے قبل ترجمان کا بیان

بیجنگ ۔14 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) چین نے اپنے صدر ژی جن پنگ کے دورہ کے موقع پرآج اپنے موقف پر اٹل رہتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کو نیوکلیئر سپلائرس گروپ (این ایس جی) کی رکنیت اور جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر کو اقوام متحدہ کی طرف سے دہشت گرد قرار دینے کیلئے نئی دہلی کی کوششوں پر اس کے موقف میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ہے۔ صدر ژی، بریکس چوٹ کانفرنس میں شرکت کیلئے کل گوا پہنچ رہے ہیں کہ اس دوران چین وزارت خارجہ کے ایک ترجمان جنگ شوانگ نے کہا کہ ہند اور چین کے درمیان باہمی تعلقات نے چند اختلافات کے باوجود زبردست پیشرفت کی ہے۔ این ایس جی اور اظہر مسعود جیسے موضوعات پر چین کے موقف میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ہے۔ پٹھان کوٹ دہشت گرد حملوں کے بعد اظہر مسعود پر امتناع کیلئے اقوام متحدہ میں ہندوستان کی درخواست سے متعلق ایک سوال پر ترجمان نے جواب دیا کہ ’’میں چین کا موقف واضح کرچکا ہوں۔ میں ادعا کرنا چاہتا ہوں کہ اس ضمن میں اقوام متحدہ کی کمیٹی نے اس عالمی ادارہ کے قواعد اور منشور کے مطابق کام کیا ہے‘‘۔ جنگ نے کہا کہ چین کا موقف ہیکہ دہشت گرد تنظیموں پر امتناع عائد کرنے والی اقوام متحدہ کی کمیٹی 1267 کو اصل حقائق پر کام کرتے ہوئے اس (ادارہ) کے ارکان کے اتفاق رائے کے مطابق فیصلہ کرنا چاہئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بعض افراد کو دہشت گرد قرار دینے کے مسئلہ پر فریقین منقسم ہیں اور یہی وجہ ہیکہ چین نے بھی اظہر (مسعود) پر امتناع کو روک دیا ہے۔ جنگ نے کہا کہ چین کی طرف سے دوسری مرتبہ فنی بنیادوں پر کی گئی رکاوٹ سے فیصلہ کیلئے مزید وقت حاصل ہوا ہے۔ اس اقدام سے چین کے ذمہ دارانہ اور پیشورانہ طرزعمل کا اظہار ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ این ایس جی میں ہندوستان کی شمولیت (کی مخالفت) کے بارے میں بھی چین کا موقف تبدیل نہیں ہوا ہے۔

TOPPOPULARRECENT