Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کیلئے مودی حکومت سے اشارہ، مہنت داس

ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کیلئے مودی حکومت سے اشارہ، مہنت داس

ملک گیر سطح پر 1.25 لاکھ دیہاتوں میں رام پوجا کا اہتمام ، وی ایچ پی
لکھنو ۔ 11 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) اب جبکہ 2017 میں اسمبلی انتخابات کے پیش نظر اترپردیش کی سیاست میں رام مندر کا مسئلہ دوبارہ مرکز توجہ بن گیا ہے ۔ وشوا ہندو پریشد نے ملک گیر سطح پر ہر ایک گاؤں میں رام مندر کی تعمیر کا فیصلہ کیا ہے ۔ وی ایچ پی ترجمان شرد شرما نے آج بتایا کہ تنظیم نے یہ فیصلہ کیا کہ ہر ایک گاؤں میں مندر تعمیر کی جائے۔ انہوں نے بتایا کہ 15 اپریل سے رام نومی شروع ہوگئی اور تنظیم کی جانب سے 7 روزہ طویل رام مہا اتسو منایا جائے گا جس کے دوران ہر ایک گاؤں میں لارڈ رام کی پوجا کا اہتمام کیا جائے گا اور اس خصوصی میں 1.25 لاکھ دیہاتوں کا احاطہ کیا جائے گا۔ مسٹر شرد شرما نے بتایا کہ سابق میں بھی تنظیم کے زیر اہتمام رام مہا اتسو منایا گیا ہے اور 70 تا 75 ہزار دیہاتوں تک رسائی حاصل کی گئی تھی اور مجوزہ رام مہا اتسو  کے دوران لارڈ رام کی مورتیوں کی خصوص پوجا کی جائے گی اور پوجا کے مقام پر رام کی مورتی یا تصویر آویزاں کی جائے گی ۔ اگرچیکہ رام مندر کا مسئلہ سپریم کورٹ میں معرض التواء ہے لیکن آئندہ اسمبلی انتخابات کے پیش نظر یہ مسئلہ پھر ایک بار اترپردیش کی سیاست میں مرکز توجہ بن گیا ہے ۔ بی جے پیلیڈر سبرامنیم سوامی نے حال ہی میں یہ امید ظاہر کی کہ ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کا کام جاریہ سال کے اختتام سے قبل شروع کرایا جائے گا۔ تاہم انہوں نے یہ بھی وضاحت کی کہ مندر کی تعمیر کسی تحریک سے نہیں بلکہ عدالتی فیصلہ کے بعد ہی عمل میں آئے گی، توقع ہے کہ یہ فیصلہ ہندوؤں اور مسلمانوں کی باہمی رضامندی سے اگست میں ستمبر میں آسکتا ہے ۔ یہ دریافت کئے جانے پر کہ آئندہ سال اترپردیش اسمبلی انتخابات کے پیش نظر آیا ، رام مندر کا مسئلہ اٹھایا جارہا ہے ۔ مسٹر شرد شرما نے کہا کہ رام کو انتخابی سیاست سے نہیں جوڑنا چاہئے چونکہ رام ، ہندوؤں کے اعتقاد کا معاملہ ہے اور ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کیلئے ہر ایک ہندو کو عہد کرنا چاہئے۔ ڈاکٹر سبرامنیم سوامی کے تبصرہ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں کروڑہا ہندوؤں کے اعتقاد کا معاملہ ہے اور آنجہانی اشوک سنگھل کے خواب کو شرمندہ تعبیر کرناچاہتے ہیں جبکہ رام مندر تحریک کے بانی اشوک سنگھل بعمر 89 سال 13 نومبر چل بسے تھے۔ دریں اثناء اترپردیش میں حکمراں سماج وادی پارٹی نے کہا کہ ایودھیا میں متنازعہ مقام پر عدالت کی اجازت کئے بغیر کوئی مندر بنانے نہیں دیا جائے گا۔ سینئر پارٹی لیڈر اور ریاستی وزیر شیوپال سنگھ یادو نے کہا کہ عدالت کی اجازت کے بغیر ایک بھی اینٹ کو لے جانے پر پابندی رہے گی ۔ واضح رہے کہ 6 ماہ قبل وشوا ہندو پریشد نے ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کیلئے ملک بھر سے پتھر اکھٹا کرنے کی مہم شروع کرنے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد گزشتہ ماہ ڈسمبر میں 2 لاری پتھر ایودھیا میں خاموشی کے ساتھ منتقل کردیئے گئے جہاں پر رام جنم بھومی نیاس کے صدر مہنت نیتا گوپال داس نے ان پتھروں کی پوجا کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایودھیا میں پتھروں کی منتقلی کا سلسلہ شروع ہوگیا اور اب رام مندر کی تعمیر کا وقت آگیا ہے جبکہ مودی حکومت سے یہ اشارہ مل گیا ہے کہ مندر کی تعمیر کا بیڑہ اٹھایا جائے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT