Sunday , September 24 2017
Home / دنیا / ایچ ون بی ویزا کیلئے جدید رہنمایانہ خطوط جاری

ایچ ون بی ویزا کیلئے جدید رہنمایانہ خطوط جاری

محض عام کمپیوٹر پروگرام ماہر پیشہ ور نہیں ہوسکتا: امریکی رولنگ
ہزاروں ہندوستانیوں کو دشواری

واشنگٹن 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے آج وضاحت کی کہ محض ایک عام کمپیوٹر پروگرامر کو اب بحیثیت ماہر پیشہ ور تصور نہیں کیا جائے گا۔ ایچ ون بی ورک ویزا کے لئے کسی درخواست گذار کا ماہر پیشہ ور کی حیثیت سے کوالیفائی ہونا ضروری ہوتا ہے۔ امریکہ کے اس اقدام کے اُن ہزاروں ہندوستانیوں پر دوررس اثرات مرتب ہوں گے جو اس زمرہ کے تحت و یزا کے لئے درخواستیں داخل کریں گے۔ امریکہ کی نئی رولنگ نے اس ملک میں گزشتہ 15 سال سے نافذ رہنمایانہ خطوط کو کالعدم اور منسوخ کردیا ہے جو نئے ہرارہ کی ضروریات اور تقاضوں کی تکمیل کے لئے جاری کئے گئے تھے۔ امریکی شہریت و ایمگریشن سرویسس (یو ایس سی آئی ایس) نے رولنگ دی ہے کہ ایک ابتدائی سطح کے کمپیوٹر پروگرامر کا مقام بالعموم واضح طور پر پیشہ وارانہ ماہر کے مقام کے مساوی نہیں ہوسکتا۔ کے ایس سی آئی ایس کی طرف سے 31 مارچ کو جاری کردہ ایک جدید پالیسی میمورنڈم کے ذریعہ 22 ڈسمبر 2000 ء کو نافذ سابق رہنمایانہ خطوط کالعدم و منسوخ کئے گئے ہیں اور یہ وضاحت کی گئی ہے کہ پیشہ ورانہ مہارت و خصوصیت کی تشریح کیا ہوتی ہے۔ اس اقدام سے ان ہزاروں ہندوستانیوں پر دوررس اثرات مرتب ہوں گے جو یکم اکٹوبر 2017 ء سے شروع ہونے والے آئندہ مالیاتی سال کے لئے H-1B ورک ویزا کے لئے درخواستیں داخل کریں گے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT