Wednesday , May 24 2017
Home / Top Stories / ایک تہائی موصل پر عراقی فوج کا قبضہ بحال

ایک تہائی موصل پر عراقی فوج کا قبضہ بحال

بغداد کے شمال اور مغرب کے بیشتر علاقوں پر حکومت کا قبضہ بحال ‘ جارحانہ فوجی کارروائی جاری

موصل ۔ 12مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) عراق کی صیانتی افواج نے ایک تہائی سے زیادہ مغربی موصل پر سے دولت اسلامیہ کا قبضہ برخواست کر کے ایک تہائی سے زیادہ مغربی موصل پر اپنا قبضہ بحال کردیا ۔ گذشتہ ماہ اس علاقہ پر دولت اسلامیہ کے قبضہ کو برخواست کرنے کیلئے جارحانہ کارروائی کا آغاز کیا گیاتھا ۔ مغربی موصل کے ایک تہائی سے زیادہ علاقہ پر اب عراقی فوج کا قبضہ ہے ۔ اسٹاف میجر جنرل مان السعدی نے کہا کہ موصل دریائے دجلا کی وجہ سے مشرقی و مغربی شہر میں تقسیم ہوتا ہے ۔ مشرقی سمت کو بایاں کنارہ اور مغربی موصل کو دایاں کنارہ کہا جاتا ہے ۔ عراقی فوج نے موصل کے بیشتر حصہ کو آزاد کروانے کیلئے کارروائی کا آغاز کردیا تھا ۔ سب سے زیادہ گنجان آباد شہر کا علاقہ اب بھی دولت اسلامیہ کے زیرقبضہ ہے ۔ 19فبروری سے یہاں سے دولت اسلامیہ کو جنوب کی جانب پسپا کرنے کی کارروائی شروع ہوچکی ہے ۔ بغداد کے شمال اور مغرب میں وسیع علاقوں پر دولت اسلامیہ نے 2014میں قبضہ کرلیا تھا لیکن امریکہ کی فضائی مدد کے ذریعہ عراقی فوجوں نے بیشتر علاقہ پر اپنا قبضہ بحال کرلیا ۔ امریکہ اور دیگر ممالک کی فوجیں عراق کی زمینی فوج کی تائید میں فضائی حملے کررہی تھیں تاکہ حکومت کے قبضہ سے چھین لینے کے بعد ان علاقوں کو دولت اسلامیہ سے آزاد کروایا جاسکے ۔ عراقی فوجوں نے بڑے پیمانے پر فوجی کارروائی موصل پر اپنا قبضہ بحال کرنے کیلئے اکٹوبر میں شروع کی تھی ۔ دریائے دجلا کے مشرقی کنارے پر واقع بیشتر بستیوں پر دوبارہ قبضہ ہوچکا ہے ۔ چھوٹے مقامات میں مغربی موصل کے علاقہ میں گنجان آبادی ہے ۔
دمشق بمباری  : ہلاکتوں کی تعداد 74ہوگئی
بیروت ۔12مارچ ( سیاست ڈاٹ کام) دمشق میں دو بم دھماکوں سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 74ہوگئی ۔ کل 43 عراقی زائرین کی شام کے دارالحکومت میں ہلاکت کی اطلاع ملی تھی ۔ انسانی رصدگاہ کے سربراہ رامی عبدالرحمن نے کہا کہ لب سڑک نصب ایک بم کو دھماکہ سے اڑا دیا گیا جب کہ زائرین ایک بس میں باب الصغیرسے گذر رہے تھے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT