Tuesday , October 24 2017
Home / Top Stories / ایک کروڑ ایکر اراضی کو سیراب کرنے اور غریبوں کے چہرہ پر مسکراہٹ دیکھنے کا عہد

ایک کروڑ ایکر اراضی کو سیراب کرنے اور غریبوں کے چہرہ پر مسکراہٹ دیکھنے کا عہد

کھمم میں بھکتارام داس آبپاشی پراجکٹ کا سنگ بنیاد، کے سی آر کا خطاب ، مساجد کا دورہ ، مصلیان سے بات چیت، فلیٹس اور قرض کی فراہمی کا وعدہ
حیدرآباد 16 فروری (این ایس ایس ؍ سیاست نیوز) تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے آج اپنے اس عہد کا اظہار کیاکہ ضلع کھمم میں رام داس بھکتا آبپاشی پراجکٹ کی تعمیر کے ضمن میں اراضیات سے محروم ہونے والے کسانوں اور دیگر افراد کو بھرپور معاوضہ ادا کیا جائے گا۔ علاوہ ازیں ڈبل بیڈ روم فلیٹس بھی دیئے جائیں گے۔ کے سی آر نے کھمم کے رولا پاڈو میں بھکتا رام داس آبپاشی پراجکٹ کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد اپنے خطاب میں کہاکہ ان کا مقصد ہے کہ عوام کی سرگرم حصہ داری اور تعاون کے ساتھ جنگی خطوط پر آبپاشی پراجکٹوں کی تکمیل کے ذریعہ ایک لاکھ ایکر اراضیات کو سیراب کیا جائے۔ کے سی آر نے دوران خطاب کہاکہ میرا حتمی مقصد یہی ہے کہ ہمارے غریب عوام کے چہروں پر مسکراہٹ دیکھ سکوں‘‘۔ اُنھوں نے اعلان کیاکہ لمباڑی تانڈوں کو گرام پنچایتوں تبدیل کیا جائے گا۔ کھمم سے سیاست نیوز کے بموجب چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے کھمم شہر کے مختلف محلہ جات کا طوفانی دورہ کیا، واضح رہے کہ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کھمم کے سرینواس نگر ، مصطفی نگر، محلہ قلعہ ، محلہ تمل گٹوہ ، شکرالو پیٹ ، قصبہ بازار ، این ایس پی کیمپ ان محلہ جات کا دورہ کیا ۔ محلہ شکرالو پیٹ میں جہاں پر قریشی برادران کی اکثریت رہتی ہے ، ان کے مکانات کو دیکھتے ہوئے جو کویلی کے ہیں، ان تمام لوگوں کو کے سی آر نے تیقن دیا کہ ڈبل بیڈروم مکانات تعمیر کرواکر حوالہ کردیئے جائیں گے ۔ مسلمانوں کو لون کے حصول کیلئے جو مسائل  بینکرس والوں سے پیش آرہے ہیں ، اس پر چیف منسٹر نے برجستہ کہا کہ بینک کنسلٹ لیٹر کی کوئی ضرورت نہیں ہے ، میں خصوصی طور پر اس  ضمن میں احکامات جاری کردو ںگا ۔ کے سی آر وہ واحد سی ایم ہیں جنہوں نے کھمم شہر آنے پر مسلمانوں کے محلہ جات کا معائنہ کیا۔ اس طرح چندر شیکھر کھمم کے محلہ قلعہ بھی پہنچے جہاں پر سو فیصد مسلمانوں کی آبادی ہے اور انہوں نے چند منٹ  کیلئے قلعہ کی مسجد میں بھی توقف کرتے ہوئے مصلیان سے ملاقات کرتے ہوئے حالات سے واقفیت حاصل کی۔ آج دوپہر میں چیف منسٹر بذریعہ روڈ کھمم سے مدی گنڈہ کے متارم گاؤں میں واقع قدیم مندر کا معائنہ کر کے پوجا کی وہاں سے چندر شیکھر راؤ ترملا پالم منڈل پہونچے۔ تروملا پالم میں عوامی جلسہ سے چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پالیر ریزرو واٹر سے تروملا پالم تک پانی پہونچایا جائے گا ۔ تلنگانہ کی سرزمین سے گوداوری بہتی ہے ، اس کے باوجود تلنگانہ کے کسان پانی سے محروم ہیں ۔ لہذا میں یہاں پر دو پراجکٹ کا سنگ بنیاد رکھ رہا ہوں۔ (1) بھکتا رام داس پراجکٹ (2) سیتارام پراجکٹ ،  جسکے ذریعہ گوداوری کے پانی کو کسانوں کیلئے آسانی کے ساتھ سربراہ کیا جائے گا، جس کے بعد تلنگانہ کے کسانوں کو 9 گھنٹے برقی سربراہی کی جائے گی ۔ چیف منسٹر نے اپنے خطاب کو جاری رکھتے ہوئے مزید کہا کہ آئندہ دو سالوں میں تلنگانہ کے 10 ا ضلاع میں بے گھر افراد اور غریبوں کیلئے 2 لاکھ ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر مکمل کرلی جا ئے گی۔ شادی مبارک اسکیم  بی سی افراد کیلئے بھی جاری کی جائے گی جس سے بی سی طبقات کے لوگ استفادہ کرسکے۔ کھمم ضلع کو تلنگانہ میں ایک منفرد ضلع بنایا جائے گا ۔ تروملالا پالم منڈل ایک غریب منڈل ہے ، یہاں کی اکثریت غریب افراد پر مشتمل ہے ، اس منڈل کو سطح غربت سے نکالنے کے لئے جامع اقدامات کئے جانے کا تیقن دیا ۔ بعد ازاں چیف منسٹر تروملا پالم منڈل سے بذریعہ ہیلی کاپٹر ٹیکل پلی منڈل کے رولر پاڑ روانہ ہوئے جہاں پر عوامی جلسہ سے خطاب کیا ۔

TOPPOPULARRECENT