Monday , October 23 2017
Home / Top Stories / ای پی ایف کی منہائی پر ٹیکس کی تجویز سے دستبرداری کا مطالبہ

ای پی ایف کی منہائی پر ٹیکس کی تجویز سے دستبرداری کا مطالبہ

ملازمین کو راحت فراہم کی جائے ’’چوروں‘‘ کو نہیں۔ کالا دھن پر ’’فیر اینڈ لولی‘‘ اسکیم ، راہول گاندھی کا طنز
نئی دہلی 3 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) نائب صدر کانگریس راہول گاندھی نے ای پی ایف منہائی پر ٹیکس کی تجویز واپس لینے اپوزیشن کے مطالبہ کی بھرپور تائید کرتے ہوئے آج صدائے احتجاج بلند کیا۔ انھوں نے کہاکہ ملازمین کو راحت دی جانی چاہئے اُن ’’چوروں‘‘ کو نہیں جنھیں بجٹ میں کالا دھن پر ’’فیر اینڈ لولی اسکیم‘‘ کے ذریعہ فائدہ پہنچایا جارہا ہے۔ راہول گاندھی نے پارلیمنٹ ہاؤز کامپلکس کے باہر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ ای پی ایف ملازمین کا محفوظ سرمایہ ہے اور اُس پر ٹیکس نافذ کرنا انتہائی غلط ہوگا۔ وزیراعظم کو چاہئے کہ ٹیکس کی تجویز واپس لینے کا فوری اعلان کریں۔ اُنھوں نے کہاکہ نریندر مودی کو اِس تجویز سے دستبرداری کے ذریعہ ملازمین اور رائے دہندگان کا اعتماد بحال کرنا چاہئے۔ کالا دھن پر سنگل ونڈو اسکیم کی تجویز کو پھر ایک بار تنقیدوں کا نشانہ بناتے ہوئے راہول گاندھی نے کہاکہ ملازمین کو راحت دی جانی چاہئے ’’چوروں‘‘ کو نہیں۔ راہول گاندھی نے کہاکہ کل اُنھوں نے نریندر مودی پر واضح کردیا کہ اُنھوں نے چوروں کو فیل اینڈ لولی اسکیم دی ہے۔

اِس کے برعکس ہمارے رائے دہندوں اور ملازمین کو راحت دی جانی چاہئے تھی۔ بجٹ میں کالا دھن رکھنے والوں کے لئے سنگل ونڈو اسکیم کا اعلان کیا گیا ہے۔ راہول گاندھی نے اس کا تذکرہ کرتے ہوئے کل کہا تھا کہ یہ اسکیم سوائے کالا دھن کو جائز بنانے کے کچھ نہیں۔ اُنھوں نے کہا وزیر فینانس نے کل نئی ’’فیر اینڈ لولی‘‘ اسکیم کا اعلان کیا تھا۔ اس اسکیم میں ملک کا چور اپنے کالا دھن کو سفید میں تبدیل کرسکتا ہے۔ اگر کوئی کرپشن میں ملوث رہے تو اُسے اپنا کالا دھن فیر اینڈ لولی اسکیم کے ذریعہ جائز بنانے کی پوری سہولت فراہم کی گئی ہے۔ 2016-17 ء بجٹ تقریر میں جاریہ سال یکم اپریل کے بعد ای پی ایف سے رقم کی منہائی کے 60 فیصد پر حکومت نے ٹیکس کی تجویز پیش کی ہے۔ بعدازاں ایک سرکاری بیان جاری کرتے ہوئے وضاحت کی گئی کہ کارپس پر حاصل ہونے والے مجموعی ریٹرنس پر ہی یہ ٹیکس عائد کیا جارہا ہے اور فریقین جو حصہ ادا کرتے ہیں اُس پر ٹیکس کی تجویز نہیں ہے۔ پنشن اور پراویڈنٹ فنڈ اسکیم کے تحت مجموعی رقم تقریباً 6.5 لاکھ کروڑ ہے۔

جلال آباد میں ہندوستانی قونصل خانہ پر زائد سکیوریٹی
نئی دہلی 3 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی قونصل خانہ کے اطراف زائد افغان فورس تعینات کی گئی ہے جبکہ افغانستان کے جلال آباد شہر میں مسلح دہشت گردوں بشمول خودکش بم باروں نے کل اسے حملہ کا نشانہ بنایا تھا۔ وزارت اُمور خارجہ کے ترجمان وکاس سوروپ نے کہاکہ نیشنل ڈائرکٹوریٹ آف سکیوریٹی اور افغان نیشنل پولیس کے سینئر عہدیداروں نے قونصل خانہ کا دورہ کیا اور یہاں کے اسٹاف کو مکمل تعاون کا تیقن دلایا۔ اُنھوں نے بتایا کہ کل تقریباً 12 بجے دن 5 دہشت گردوں کے گروپ نے جلال آباد میں ہندوستانی قونصل خانہ کو حملہ کا نشانہ بنایا۔ قونصل خانہ کے کوئی بھی اسٹاف اس حملہ میں زخمی نہیں ہوا۔ تاہم مقامی اسٹاف کے ایک شخص کی انگلی زخمی ہوگئی۔

TOPPOPULARRECENT