Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / اے آئی ایس ایف کا 17 نومبر کو چلو پارلیمنٹ پروگرام

اے آئی ایس ایف کا 17 نومبر کو چلو پارلیمنٹ پروگرام

فرقہ پرستی کے خلاف جدوجہد، سید ولی اللہ قادری کا بیان
حیدرآباد 21 اکٹوبر (سیاست نیوز) ملک کے موجودہ حالات بالخصوص تعلیمی نظام میں زعفرانی طاقتوں کے اثر کے خلاف اے آئی ایس ایف نے احتجاج کا فیصلہ کیا ہے۔ کمیونسٹ طلبہ تنظیم اے آئی ایس ایف نے اپنی قومی عاملہ میں ملک کے موجودہ حالات پر تشویش کا اظہار کیا اور ملک کو فرقہ پرستوں کے چنگل سے آزاد کروانے کے لئے طلبہ کو تحریک سے جوڑنے اور جدوجہد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ صدر آل انڈیا اسٹوڈینٹ فیڈریشن (اے آئی ایس ایف) مسٹر سید ولی اللہ قادری نے اپنے بیان میں بتایا کہ طلبہ تنظیم ملک کے اُن دانشوران، ادیبوں، شعراء کے ساتھ ہے جو ساہتیہ اکیڈیمی کے ایوارڈس کو احتجاجاً واپس کررہے ہیں۔ اُنھوں نے بتایا کہ ان ادیبوں، شعراء اور دانشوروں کے ساتھ اے آئی ایس ایف اظہار یگانگت کرتی ہے۔ اُنھوں نے بتایا کہ ان سے اظہار ہمدردی اور قومی سلامتی و ملک کی سالمیت کو برقرار رکھنے کے لئے ایک ٹھوس فیصلہ لیا گیا ہے۔ اُنھوں نے بتایا کہ اے آئی ایس ایف سے وابستہ تمام قائدین قومی و ریاستی سطح کے لیڈر بھی اپنے گولڈ میڈلس اور ایوارڈس کو واپس کردیں گے اور یہ اقدام بھی قومی سطح پر چلایا جارہا ہے۔ اُنھوں نے مرکزی حکومت کی تعلیمی پالیسیوں کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہاکہ تعلیمی نظام میں فرقہ پرستوں کی جڑوں کو مضبوط کرنے کے خلاف 17 نومبر کو چلو پارلیمنٹ منعقد کیا جائے گا۔ اُنھوں نے طلبہ برادری اور ملک کے دانشوروں سے اپیل کی کہ وہ طلبہ تنظیم کی ملک بچاؤ کوشش کو کامیاب بنائیں۔

TOPPOPULARRECENT