Tuesday , September 19 2017
Home / شہر کی خبریں / اے پی خانگی بل پر راجیہ سبھا میں پھر ہنگامہ

اے پی خانگی بل پر راجیہ سبھا میں پھر ہنگامہ

نئی دہلی، 26 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ اور پیکیج دینے کی مانگ کے سلسلے میں آج بھی کانگریس نے راجیہ سبھا میں ہنگامہ کیا اور وقفہ طعام کے بعد کام کاج نہیں ہونے دیا۔وقفہ طعام کے بعد ایک بار ملتوی ہونے کے بعد ایوان کی کارروائی کل تک کے لئے ملتوی ہو گئی۔شام چار بجے جب دوبارہ کارروائی شروع ہوئی تو کانگریس کے تقریبا 20 اراکین پھر چیئرمین کی کرسی کے پاس آکر کے وی پی رام چندر راؤ کے گذشتہ جمعہ کے نجی بل پر ووٹنگ کے مطالبے کے سلسلے میں نعرے بازی کرنے لگے ۔ڈپٹی چیئرمین پی جے کورین کا کہنا تھا کہ آج کے دن نجی بل پر بحث نہیں ہو سکتی ہے ۔ وہ چیئرمین کی اجازت لے کر ہی اگلے جمعہ کو اسے پیش کرنے کے بارے میں کوئی ہدایت دے سکتے ہیں کیونکہ اگلے جمعہ کو نجی بل پیش کیا جانا ہے ۔دریں اثنا ، ایوان کے لیڈر ارون جیٹلی نے کہا کہ یہ نجی بل دراصل مالیاتی بل کی نوعیت کی ہے اور کسی بھی مالیاتی بل پر راجیہ سبھا میں آئینی ضابطوں کے تحت ووٹنگ نہیں ہو سکتی کیونکہ مالیاتی بل لوک سبھا میں ہی پیش ہوتا ہے ۔ مسٹر کورین نے بھی کہا کہ مالی بل کے بارے میں لوک سبھا اسپیکر ہی کوئی فیصلہ کرسکتی ہیں۔ لہذا اس ایوان میں اس پر بحث ممکن نہیں ہے ۔ویسے ، مسٹر جیٹلی نے کہا کہ ہم نجی بل پر ابھی بحث کرانے کو تیار ہیں، مگر ووٹنگ اصول کے خلاف ہے ، اس لئے یہ ممکن نہیں ہے ۔ لیکن کانگریس کے رکن اپنی بات پر بضد رہے ۔ وہ مسٹر راؤ کے نجی بل پر ووٹنگ کی مانگ کو لے کر نعرے بازی کرتے رہے ۔ صورت حال کو بگڑتی دیکھ کر مسٹر کورین نے ایوان کی کارروائی کل تک ملتوی کر دی۔

TOPPOPULARRECENT