Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / اے پی سکریٹریٹ کی عمارتوں کی تلنگانہ کو حوالگی کی درخواست

اے پی سکریٹریٹ کی عمارتوں کی تلنگانہ کو حوالگی کی درخواست

گورنر نرسمہن سے چیف منسٹر کے سی کی بات چیت‘ کابینی قرارداد کی پیشکشی
حیدرآباد۔ 23 اکتوبر (سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے آج ای ایس ایل نرسمہن نے راج بھون پہنچ کر ملاقات کی۔ اس موقع پر چندر شیکھر راؤ نے آندھرا پردیش کیلئے مختص کردہ سیکریٹریٹ کی عمارتوں، قانون ساز اسمبلی و قانون ساز کونسل عمارتوں کو فی الفور تلنگانہ حکومت کے حوالے کروانے کا گورنر سے درخواست کی۔ گورنر کو بتایا کہ مشترکہ راجدھانی حیدرآباد میں رہنے کی وجہ سے آندھرا پردیش کیلئے نظم و نسق کی انجام دہی کیلئے مختص عمارتوں کو فوری طور پر حکومت تلنگانہ کے حوالے کرنے کی درخواست کرتے ہوئے گزشتہ دن منعقدہ ریاستی کابینہ کے اجلاس میں منظورہ قرارداد سے بھی واقف کروایا۔ چیف منسٹر نے کابینہ میں منظورہ قرارداد کی کاپی گورنر نرسمہن کو پیش کی۔ تلنگانہ کیلئے تعمیر کی جانے والی مجوزہ نئی سیکریٹریٹ عمارت کے تعلق سے گورنر کے ساتھ چندر شیکھر راؤ نے تفصیلی تبادلہ خیال کیا اور ممکنہ حد تک جلد سے جلد آندھرا پردیش حکومت کو سیکریٹریٹ میں مختص کردہ عمارتوں کی تلنگانہ حکومت کو حوالگی کیلئے موثر اقدامات کرنے کی گورنر سے خواہش کی۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ گزشتہ ہفتہ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ، گورنر سے ملاقات کرکے عمارتوں کی حوالگی کے معاملے میں گورنر سے مشورہ لیا تھا اور بعدازاں خود گورنر نرسمہن نے وجئے واڑہ پہنچ کر چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو سے ملاقات کرکے انہیں رضامند کرلیا، تاہم چیف منسٹر تلنگانہ نے ضابطہ کی تکمیل کے طور پر فوری طور پر کابینہ کا اجلاس طلب کرکے قرارداد منظور کی تھی اور اس قرارداد کے ذریعہ عمارتوں کی حوالگی راہ ہموار ہوجانے کا اظہار کیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT