Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ا27اپریل کو کھمم میں ٹی آر ایس کا پلینری سیشن

ا27اپریل کو کھمم میں ٹی آر ایس کا پلینری سیشن

پوسٹرس کا رسم اجراء ، اپوزیشن پر تنقید ، وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی کی پریس کانفرنس
حیدرآباد۔ 18۔ اپریل ( سیاست نیوز) وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی نے 27 اپریل کو کھمم میں ہونے والے ٹی آر ایس کے 15 ویں پلینری سیشن کے پوسٹرس کی رسم اجراء انجام دی۔ تلنگانہ بھون میں منعقدہ اس تقریب میں نرسمہا ریڈی نے کہا کہ پارٹی کی جانب سے جاریہ سال یوم تاسیس کے موقع پر کھمم میں پلینری کے انعقاد کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سیشن میں صبح مندوبین کا اجلاس ہوگا جبکہ شام میں جلسہ عام منعقد کیا جائے گا جس سے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ خطاب کریںگے۔ انہوں نے کہا کہ سیشن میں حیدرآباد سے 600 مندوبین شرکت کریںگے۔ انہوں نے کہاکہ ریاست کے تمام اضلاع میں ٹی آر ایس پارٹی کو مستحکم کرنے کیلئے توجہ مبذول کی گئی ہے۔ کھمم میں پلینری کے انعقاد کا مقصد پارٹی کو ضلعی سطح پر مضبوط کرنا ہے۔ چیف منسٹر کے سی آر نے حیدرآبادکے بجائے اضلاع میں یوم تاسیس کے انعقاد کا فیصلہ اسی مقصد سے کیا ہے۔ نرسمہا ریڈی نے بتایا کہ ہر ضلع میں منڈل سطح تک کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں۔ چیف منسٹر کی جانب سے شروع کی گئی فلاحی و ترقیاتی اسکیمات کا عوام کو فائدہ ہورہا ہے اور پارٹی کیڈر اسکیمات کو عوام تک پہنچانے میں اہم رول ادا کر رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ ریاست کے قیام کے بعد سے جتنے بھی انتخابات ہوئے چاہے وہ ضمنی انتخابات ہوں یا مجالس مقامی کے تمام میں ٹی آر ایس نے شاندار کامیابی حاصل کی ہے۔ عوام کو ٹی آر ایس حکومت پر مکمل بھروسہ ہے اور وہ اپوزیشن کے بہکاوے میں آنے والے نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کی کارکردگی سے متاثر ہوکر دیگر جماعتوں سے تعلق رکھنے والے ارکان اسمبلی ٹی آر ایس میں شامل ہورہے ہیں ۔ انہوں نے تلگو دیشم اور کانگریس ارکان اسمبلی کی ٹی آر ایس میں شمولیت کو حق بجانب قرار دیا اور اس سلسلہ میں اپوزیشن کے الزامات کو مسترد کردیا۔ نرسمہا ریڈی نے کہا کہ راج شیکھر ریڈی دور حکومت میں جب ٹی آر ایس کے ارکان اسمبلی کانگریس میں شامل کئے جارہے تھے تو اس وقت جانا ریڈی کیوں خاموش تھے۔ انہوں نے اپوزیشن کو انتباہ دیا کہ چیف منسٹر وزراء اور ارکان اسمبلی کے خلاف بے بنیاد الزامات کو برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ اپوزیشن کے پاس حکومت کیلئے کوئی تعمیری تجاویز نہیں ہے، لہذا وہ صرف تنقیدوں پر انحصار کر رہی ہے۔ وزیر داخلہ نے بتایاکہ 500 سے زائد عوامی نمائندے پلینری سیشن میں شرکت کریں گے۔ ریاست میں درپیش مسائل اور فلاحی اسکیمات پر عمل آوری کے سلسلہ میں پلینری میں مباحث ہوں گے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ 27 اپریل سے قبل نامزد عہدوں پر تقررات کئے جائیں گے کیوں کہ پارٹی قائدین اور کارکنوں کی خواہش ہے کہ جلد سے جلد نامزد عہدوں پر تقررات کئے جائیں ۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ ریاست میں خشک سالی کی صورتحال سے نمٹنے کیلئے مرکزی حکومت سے مناسب امداد حاصل نہیں ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ کو مرکز سے خشک سالی کی امداد کے سلسلہ میں اہم رول ادا کرناچاہئے ۔ ایک سوال کے جواب میں وزیر داخلہ نے کہاکہ وہ راجیہ سبھا کی نشست کی دوڑ میں نہیں ہیں۔ چیف منسٹر و پارٹی کے صدر جو بھی ذمہ داری لیں گے وہ بخوبی نبھائیں گے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ 2014 ء میں کے سی آر نے انہیں اسمبلی انتخابات میں حصہ لینے کی پیشکش کی تھی لیکن انہوں نے معذرت کرلی۔ بعد میں انہیں ایم ایل سی بناکر کابینہ میں شامل کیا گیا ۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ چیف منسٹر جب تک برقرار رکھیں گے وہ کابینہ میں رہیں گے۔

TOPPOPULARRECENT