Thursday , July 27 2017
Home / Top Stories / بابری مسجد انہدام کے مقدمہ پر سپریم کورٹ میں آج سماعت

بابری مسجد انہدام کے مقدمہ پر سپریم کورٹ میں آج سماعت

اڈوانی، جوشی، اوما بھارتی کیخلاف سازش کے الزام سے دستبرداری کیخلاف اپیل پر بحث

نئی دہلی ۔ 22 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے بابری مسجد انہدام کیس کی کل سماعت مقرر کی ہے۔ اس مقدمہ میں بی جے پی کے سینئر قائدین ایل کے اڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور اوما بھارتی ملزمین ہیں۔ جسٹس پی سی گھوش کی قیادت میں ایک بنچ نے کہا کہ ان (جسٹس گھوش) کے علاوہ جسٹس آر ایف ناریمن پر مشتمل ایک بنچ کل اس مقدمہ کی سماعت کرے گی۔ جسٹس ناریمن آج عدالت میں موجود نہیں تھے۔ اس بنچ نے جس میں جسٹس دیپک گپتا بھی شامل ہیں، کہاکہ جسٹس ناریمن کل واپس ہوں گے اور مقدمہ کی سماعت کریں گے۔ حاجی محبوب  احمد نے تحت کی عدالت میں اس مقدمہ کے موقف کے بارے میں رپورٹ کی پیشکشی کیلئے ایک ہفتہ کی مہلت کی اپیل کے ساتھ درخواست داخل کی ہے۔ سینئر ایڈوکیٹ کے کے وینو گوپال نے بی جے پی قائدین کی طرف سے رجوع ہوتے ہوئے کہا کہ انہیں چند دستاویزات داخل کرنے کا موقع فراہم کرنے کیلئے چار ہفتوں بعد اس مقدمہ کی سماعت کی جانی چاہئے۔ 1992ء کے دوران ایودھیا کی متنازعہ رام جنم بھومی پر بابری مسجد کے انہدام سے متعلق مقدمہ کے ملزمین بشمول اڈوانی، جوشی اور اوما بھارتی کے خلاف سازش کے الزامات سے دستبرداری کی مخالفت میں دائر کردہ اپیل پر عدالت عظمیٰ نے 6 مارچ کو جرح کا فیصلہ کیا تھا۔ حاجیمحبوب احمد اور سی بی  آئی نے 6 ڈسمبر 1992ء کو متنازعہ ڈھانچہ کے انہدام کے ضمن میں اڈوانی، جوشی اور دیگر 19 ملزمین کے خلاف سازش کے الزامات سے دستبرداری کی مخالفت کی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT