Monday , September 25 2017
Home / Top Stories / بابری مسجد کی شہادت کے پس پردہ افراد کو سزا کا مطالبہ

بابری مسجد کی شہادت کے پس پردہ افراد کو سزا کا مطالبہ

سیاسی اور سماجی تنظیموں کے علاوہ طلبہ ، خواتین اور نوجوانوں پر مشتمل احتجاجی جلوس اور جلسہ عام
نئی دہلی۔ 6 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) کئی تنظیموں نے مطالبہ کیا کہ بابری مسجد کی شہادت کے ذمہ دار افراد کو سزا دی جائے۔ آج ایک احتجاجی جلوس بابری مسجد کی شہادت کی 24 ویں برسی پر نکالا گیا جو جنتر منتر پر جلسہ عام میں تبدیل ہوگیا۔ سیاسی اور سماجی کارکن جو تقریباً 30 تنظیموں کی نمائندگی کرتے تھے، طلبہ، خواتین اور نوجوانوں پر مشتمل تھا۔ منڈی ہاؤز سے پلے کارڈس اُٹھائے ہوئے جنتر منتر تک جلوس کی شکل میں گئے جہاں پر ایک جلسہ عام منعقد کیا گیا۔ احتجاجی بابری مسجد کی ایودھیا میں شہادت کے لئے ذمہ دار افراد کو سزا کا مطالبہ کرتے ہوئے نعرہ بازی کررہے تھے۔ انہوں نے سکھ دشمن فسادات 1984ء اور ملک میں دیگر فرقہ وارانہ فسادات کے پوشیدہ ذمہ دار افراد کو سزا کا مطالبہ کرتے ہوئے نعرہ بازی بھی کی۔ لوک راج سنگھٹن کے برجو نائیک نے یہ جلوس تمام انصاف دوست جمہوری عوام کی متحدہ کارروائی کی نمائندگی کرتا ہے جو ان کے جمہوری اور انسانی حقوق کے لئے جدوجہد کررہے ہیں۔ احتجاج میں جماعت اسلامی ہند، کمیونسٹ ورکر پارٹی برائے ہندوستان، کل ہند ملی کونسل، نوجوان بھارت سبھا، شہری برائے جمہوریت، مشترکہ سکھ مشن، سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا کے علاوہ دیگر تنظیموں کے کارکنوں نے مشترکہ عوامی جلوس اور جلسہ عام میں شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT