Saturday , August 19 2017
Home / پاکستان / بات چیت منسوخ کرنے کا ہندوستان پر الزام

بات چیت منسوخ کرنے کا ہندوستان پر الزام

مشیران قومی سلامتی سطح کے مذاکرات کی تنسیخ پر پاکستانی ذرائع ابلاغ کے تبصرے ‘اخباروں میں نمایاں خبریں

اسلام آباد ۔23اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستانی ذرائع ابلاغ نے آج ہندوستان پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ پہلی بار ہونے والی مشیران قومی سلامتی سطح کی بات چیت منسوخ کرنے کا ذمہ دار ہے ۔ کیونکہ اُس نے مشیر قومی سلامتی پاکستان سرتاج عزیز سے دورہ ہند سے قبل شرائط پیش کردی تھیں ۔ اس طرح باہمی تعلقات کو معمول پر لانے کی کوششوں پر کاری ضرب لگی ہے ۔ سرتاج عزیز توقع کی کہ دہشت گردی اور دیگر دیرینہ مسائل پر اپنے ہم منصب اجیت ڈوول سے بات چیت کریں گے لیکن ان کا دورہ منسوخ کردیا گیا کیونکہ ہندوستان نے پاکستان سے خواہش کی تھی کہ یہ تیقن دیا جائے کہ کشمیری علحدگی پسند قائدین سے ملاقات نہیں کی جائے گی ۔ صفحہ اول کے تمام اخبارات میں مشیران قومی سلامتی سطح کی مذاکرات کی تنسیخ کی خبر صفحہ اول پر شائع کی گئی ہے اور اس میں ہندوستان کی جانب سے ’’ پیشگی شرائط ‘‘ پیش کرنے کو خصوصی اہمیت دی گئی ہے اور کہا گیا ہے کہ اسی کے نتیجہ میں مذاکرات آغاز سے پہلے ناکام ہوگئے ۔

کثیر الاشاعت روزنامہ ’’ڈان ‘‘ نے صفحہ اول پر سرخی کے ساتھ خبر شائع کی ہے ۔ ’’ مشیران قوم سلامتی کی بات چیت ہندوستانی شرائط کی وجہ سے ناکام ‘‘  خبر کے بموجب شدید پش و پیش کے بعد حکومت نے ہفتہ کے دن فیصلہ کیا کہ مشیران قومی سلامتی کی مجوزہ ملاقات منسوخ کردی جائے ‘ اس میں نئی دہلی کی جانب سے توسیع ایجنڈہ کی اجازت سے انکار کا بھی تذکرہ کیا گیا ہے اور کشمیری قائدین سے ملاقات پر پابندی کا بھی ذکر ہے ۔ روزنامہ ’’دی نیوزانٹرنیشنل ‘‘ کی سرخی ہے ’’ پیشگی شرائط کے ساتھ کوئی مذاکرات نہیں ‘ پاکستان کا ہندوستان کو پیغام ‘‘ ۔ خبر میں کہا گیا ہے کہ رات دیر گئے تک بے نتیجہ بات چیت کرنے کے بجائے پاکستان نے کہا کہ ہندوستان کی ہدایات ایک ہمالیائی غلطی ہیں اور وہ مشیران قومی سلامتی کی بات چیت میں ہندوستان کی جانب سے مقرر کردہ پیشگی شرائط کے ساتھ شرکت نہیں کرے گا ۔ حکومت نے مزید کہا کہ پاکستان کی جانب سے قطعی جواب دیا جاچکا ہے ۔

شکر ہے کہ لفظی جنگ ہفتہ کی رات ختم ہوگئی ۔ پہلی بار امن اور بہتر باہمی تعلقات ابھرے تھے جو بڑے پیمانے پر ناکام ثابت ہوئے ۔ روزنامہ ’’ ایکسپریس ٹریبون‘‘ نے بات چیت کی تنسیخ کو ہند۔ پاک تعلقات کو معمول پر لانے کی کوشش پر کاری ضرب قرار دیا  اور کہا کہ اجیت ۔ ڈوول ملاقات سے روس کے شہر اوفا میں دونوں ممالک کے وزرائے اعظم کی ملاقات کے دوران اتفاق کیا گیا تھا ۔ ’’ روزنامہ دی نیشن ‘‘ صفحہ اول پر خبر کی سرخی لگائی ہے ’’ اٹل ہندوستان نے امن کی امیدوں کا قتل کردیا ‘‘ خبر میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان کا بے لچک رویہ اس بامقصد بات چیت کی تنسیخ کی کلیدی وجہ ہے ۔ ہندوستان نے کل سنا گیا کہ امن کی اس علاقہ میں امیدیں عملی اعتبار سے قتل کردی گئیں ‘ جب کہ پاکستان کے ساتھ مجوزہ بات چیت ناقابل قبول شرائط عائد کرنے کی وجہ سے ناکام ہوگئی ۔ حالانکہ کسی بھی فریق نے سرکاری طور پر بات چیت منسوخ کرنے کا اعلان نہیں کیا ۔ اردو ذرائع ابلاغ اور ٹی وی چینلس کا لب و لہجہ اور بھی زیادہ سخت تھا ۔ انہوں نے واضح طور پر بات چیت منسوخ ہونے کا الزام مکمل طور پر ہندوستان کے رویہ پر عائد کیا ۔ ذرائع ابلاغ نے یہ بھی ظاہر کرنے کی کوشش کی کہ وزیراعظم نریندر مودی اور اُن کی حکومت پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے سلسلہ میں سنجیدہ نہیں تھی اور انہوں نے صرف موقع سے استفادہ کرتے ہوئے اندرون ملک لوگوں کو مطمئن کرنے کی کوشش کی ۔

TOPPOPULARRECENT