Friday , September 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / باحجاب سعودی اتھلیٹ ہار کر بھی سب کا دِل جیت گئیں

باحجاب سعودی اتھلیٹ ہار کر بھی سب کا دِل جیت گئیں

ریو ڈی جینیرو۔ 15اگست (سیاست ڈاٹ کام) 100 میٹر کی دوڑ میں ہار کر بھی دل جیتنا کوئی 22 سالہ کریمن عبدالجدائل سے سیکھے، جس نے 100 میٹر۔ سپرنٹ میں حجاب پہن کر سعودی عرب کی نمائندگی کرتے ہوئے تاریخ رقم کر دیا۔کریمن اپنی ہٹ میں ساتویں نمبر پر رہتے ہوئے تمغہ کی دوڑ سے باہر ضرور ہو گئی لیکن دنیا بھر کے شائقین کے ذہن میں ان کے تئیں احترام بڑھ گیا اور سب کا دل جیت لیا۔حجاب پہن کر 100 میٹر تیزرفتار دوڑ میں کریمن نے 14-16 سیکنڈ کا وقت نکالا اور وہ امریکی فلورنس گریفتھ جوائنر کی طرف سے 1988 میں بنائے عالمی ریکارڈ سے بہت پیچھے رہیں۔ پورے جسم پر پہنے کپڑے کی وجہ سے وہ دوسرے ایتھلیٹس کو چیلنج نہیں دے پائی، لیکن سوشل میڈیا پر سب کا توجہ پر حاصل کرنے میں ضرور کامیاب ہوئی ۔شائقین نے لکھا ہے کہ ہم امید کرتے ہیں کہ سعودی عرب سے اب زیادہ خواتین کھلاڑی سامنے آئیں گی۔ ایک ٹویٹر ہینڈل سے لکھا گیا، کریمن آپ نے صرف حصہ لے کر ہی بڑی کامیابی حاصل کر لی۔دراصل، کریمن بھی اب سارہ عطار کے نقش قدم پر چلی ہے جو حجاب پہن کر سعودی عرب کی نمائندگی کرنے والی پہلی خاتون کھلاڑی بنی تھیں۔واضح رہے کہ عطار نے 2012 کے لندن اولمپک میں حجاب پہن کر 800 میٹر دوڑ میں سعودی عرب کی نمائندگی کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT