Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / بارش سے شہر کی سڑکیں تباہ ، وزیر بلدی نظم و نسق کا بیرونی دورہ

بارش سے شہر کی سڑکیں تباہ ، وزیر بلدی نظم و نسق کا بیرونی دورہ

کے ٹی آر کو قلمدان سے علحدہ کرنے کا مطالبہ ، وی ہنمنت راؤ کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 13 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : سکریٹری اے آئی سی سی و سابق رکن راجیہ سبھا مسٹر وی ہنمنت راؤ نے کے ٹی آر کو وزارت بلدی نظم و نسق کے قلمدان سے علحدہ کرتے ہوئے شہر حیدرآباد کی نمائندگی کرنے والے تین وزراء میں کسی ایک کو سونپنے کا چیف منسٹر سے مطالبہ کیا ۔ بیرونی ممالک کے دورے کرنے کے معاملے نریندر مودی کی تقلید کرنے کا ریاستی وزیر کے ٹی آر پر الزام عائد کیا ۔ آج اسمبلی کے میڈیا کانفرنس ہال میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر وی ہنمنت راؤ نے کہا کہ حالیہ بارش سے شہر میں سڑکوں کی ابتر صورتحال ہے اور تھوڑی سی بارش سے ڈرینج نظام کی حالت منظر عام پر آگئی ہے ۔ جنگی خطوط پر ناکارہ سڑکوں کی تعمیر کرنے اور ڈرینج نظام کو باقاعدہ بنانے میں دلچسپی دکھانے کے بجائے ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر امریکہ کے دورے پر ہیں اور وہاں کی ملٹی نیشنل کمپنیوں کو حیدرآباد اور تلنگانہ میں سرمایہ کاری کرنے کی دعوت دے رہے ہیں ۔ وہ سرمایہ کاروں کو دعوت دینے کے خلاف نہیں ہے ۔ حیدراباد میں سرمایہ کاری ہوتی ہے تو اچھی بات ہے ۔ نوجوانوں کے لیے روزگار کے مواقع فراہم ہوں گے ۔ مگر کے ٹی آر کا وزارت بلدی نظم و نسق کو وقت نہ دینے سے ترقیاتی و تعمیری کاموں میں رکاوٹ پیدا ہورہی ہے جس کی سزا عام شہریوں کو مل رہی ہے ۔ لہذا وہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ کے ٹی آر کو وزارت بلدی نظم و نسق کے قلمدان سے علحدہ کرتے ہوئے ان کی جگہ شہر حیدرآباد کی نمائندگی کرنے والے وزراء محمد محمود علی ، پدما راؤ اور ٹی سرینواس یادو میں کسی ایک کو وزارت بلدی نظم و نسق کے قلمدان کی زائد ذمہ داری سونپ دیں ۔ اور کے ٹی آر کو وزیراعظم نریندر مودی کی تقلید کرتے ہوئے سرکاری مصارف پر بیرونی ممالک کے دورے کرنے کی مکمل آزادی دے دیں ۔ مسٹر وی ہنمنت راؤ نے مسلمانوں کا جائزہ اجلاس پرانے شہر کے بجائے فارم ہاوز پر طلب کرنے پر بھی چیف منسٹر کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں سے کے سی آر کو کتنی ہمدردی ہے اس سے اندازہ ہوتا ہے ۔ سکریٹری اے آئی سی سی نے سروے پر بھروسہ ہے تو قبل ازیں عام انتخابات کرانے کا چیف منسٹر سے مطالبہ کیا ۔ بتکماں کنٹہ کو نظر انداز کرتے ہوئے بیرونی ممالک میں منعقد ہونے والے بتکماں پروگرامس میں شرکت کرنے کا کویتا پر الزام عائد کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT