Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / بارش کے نقصانات کا فوری تخمینہ کرنے ڈپٹی چیف منسٹر کی ہدایت

بارش کے نقصانات کا فوری تخمینہ کرنے ڈپٹی چیف منسٹر کی ہدایت

سڑکوں کی مرمت پر توجہ دینے بلدی عہدیداروں کو مشورہ ، عوام کی شکایات کا فوری ازالہ ضروری
حیدرآباد۔/10مئی، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے بلدی عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ شہر میں بارش کے نقصانات کا فوری تخمینہ کرتے ہوئے سڑکوں کی درستگی اور دیگر بنیادی مرمتی کاموں پر توجہ مرکوز کریں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے گزشتہ ایک ہفتہ سے جاری بارش کے سبب ہوئے نقصانات کا جائزہ لیا اور شہر کے مختلف علاقوں سے موصولہ نمائندگیوں اور شکایات کی بنیاد پر عہدیداروں کو ہدایات جاری کی۔ انہوں نے بلدی اور برقی عہدیداروں سے کہا کہ بارش کی صورت میں سڑکوں پر پانی کی نکاسی کے کام پر خصوصی توجہ دی جائے اور برقی سربراہی میں کوئی خلل نہ پڑے۔ شہر کے مختلف علاقوں سے ڈپٹی چیف منسٹر کو شکایات موصول ہوئی تھیں کہ بارش کے سبب پانی نشیبی علاقوں کے مکانات میں داخل ہوچکا ہے اور بلدی حکام، فائر سرویس کا عملہ پانی کی نکاسی پر توجہ دینے میں ناکام ہوچکے ہیں۔ عوام نے شکایت کی کہ بلدیہ کے ایمرجنسی نمبرس کو بارہا کال کرنے کے باوجود ہنگامی عملے کو روانہ نہیں کیا گیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے ان شکایات پر شدید ردعمل کا اظہار کیا اور کہا کہ بارش کے سبب سڑکوں کو نقصان اور درخت گرنے سے پیدا ہونے والی رکاوٹ جیسے مسائل پر فوری توجہ کی ضرورت ہے۔ انہوں نے عہدیداروں کو پابند کیا کہ وہ مسائل کی یکسوئی میں کوئی کوتاہی نہ کریں کیونکہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے بارش کی صورت میں فوری ہنگامی منصوبہ کے ساتھ کام کرنے کی ہدایات جاری کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سڑکوں پر پانی کی نکاسی اور نشیبی علاقوں کیلئے ایمرجنسی عملے کو ہمیشہ تیار رکھا جائے۔ انہوں نے کہا کہ سڑکوں کی مرمت کیلئے حکومت نے 100 دن کے ایکشن پلان کے تحت 200کروڑ روپئے مختص کئے ہیں۔ اس کے علاوہ نالوں کی صفائی کیلئے 30 کروڑ مختص کئے گئے۔ انہوں نے کہا کہ نالوں کی عدم صفائی کے نتیجہ میں پرانے شہر کے بعض علاقوں میں عوام کو شدید تکالیف کا سامنا کرنا پڑا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے بتایا کہ شہر کے انچارج وزیر کے ٹی راما راؤ کی کھمم سے واپسی کے بعد مختلف محکمہ جات کے عہدیداروں کے ساتھ اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کیا جائے گا اور شہر کے بنیادی مسائل بالخصوص بارش کے نقصانات سے نمٹنے کیلئے ہنگامی منصوبہ کو قطعیت دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ کھمم کی انتخابی مہم کے باوجود کے ٹی راما راؤ مختلف عہدیداروں سے ربط میں ہیں اور انہوں نے سڑکوں کی فوری مرمت کی ہدایت دی۔ انہوں نے برقی کی سربراہی بلاوقفہ جاری رکھنے کیلئے حکام کو ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ کئی علاقوں میں بارش کے ساتھ ہی برقی سربراہی میں خلل کی شکایات ملی ہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ حکومت حیدرآباد کو عالمی معیار کا شہر بنانے کا منصوبہ رکھتی ہے اور اس کے لئے فنڈز کی کوئی کمی نہیں ہے۔ کے ٹی راما راؤ کو بلدی نظم ونسق کے قلمدان کے ساتھ شہر کی ترقی کی ذمہ داری دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ تین برسوں میں شہر میں بنیادی سہولتوں کی فراہمی کا کام مکمل ہوجائے گا۔ سڑکوں کی توسیع، صحت و صفائی کے انتظامات اور سڑکوں سے کچرے کی نکاسی کا منظم نظام رائج ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پرانے شہر کی ترقی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے اور عوامی نمائندوں سے مشاورت کے ذریعہ ترقیاتی منصوبے پر عمل کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ ٹی آر ایس حکومت کا کارنامہ ہے اور اس پراجکٹ سے نہ صرف چارمینار کا تحفظ ہوگا بلکہ اطراف و اکناف کے علاقے کی ترقی ہوگی۔ پرانے شہر میں سیاحت کو فروغ حاصل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پرانے شہر میں موجود تمام تاریخی عمارتوں کا تحفظ کیا جائے گا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ چنچل گوڑہ جیل اور ریس کورس کی منتقلی کیلئے چیف منسٹر کی ہدایت پر منصوبہ کو قطعیت دی جارہی ہے۔ چنچل گوڑہ جیل کے مقام پر اقلیتوں کیلئے تعلیمی ادارے قائم کئے جائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT