Sunday , June 25 2017
Home / شہر کی خبریں / بارہ فیصد تحفظات کیلئے حکومت کو مؤثر رپورٹ کی مساعی

بارہ فیصد تحفظات کیلئے حکومت کو مؤثر رپورٹ کی مساعی

رکن بی سی کمیشن انجیا گوڑ کا دورہ راجندر نگر، عوام سے یادداشتوں کی وصولی
حیدرآباد 11 مارچ (سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ کی جانب سے مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کے مقصد سے بی سی کمیشن قائم کیا گیا۔ انجیا گوڑ بی سی کمیشن رکن نے رنگاریڈی اور وقارآباد اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے عوام سے ملاقات کرتے ہوئے نمائندگیاں حاصل کیں۔ انجیا گوڑ نے راجندر نگر کے علاقہ حسن نگر، اندرا نگر اور چنتل میٹ میں عوام سے ملاقات کرتے ہوئے معاشی حالات، تعلیم، زندگی گزارنے کا طریقہ اور دیگر تفصیلات حاصل کرنے کے بعد یہاں سے معین آباد، وقارآباد، تانڈور کا دورہ کرتے ہوئے ان مقامات پر بھی تمام تفصیلات حاصل کرتے ہوئے تیقن دیا کہ وہ حکومت کو مؤثر رپورٹ پیش کریں گے۔ اس موقع پر مختلف شعبوں اور اداروں کی جانب سے مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے یادداشت پیش کی۔ مختلف سیاسی جماعتوں کے قائدین نے بھی انجیا گوڑ سے ملاقات کرکے یادداشت پیش کی۔ عبدالمقیت چندا ٹی آر ایس میناریٹی سیل اسٹیٹ جنرل سکریٹری نے بتایا کہ روزنامہ سیاست کی جانب سے شروع کی گئی تحریک کا نتیجہ ہے کہ حکومت مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کے لئے بی سی کمیشن قائم کرتے ہوئے عوامی نمائندگیاں حاصل کی گئی اور اُمید ہے کہ جاریہ سال کے آخر تک تحفظات حاصل ہوجائیں گے۔ سید مزمل احمد اپرپلی ایریا کمیٹی صدر نے بتایا کہ مسلمان بے حد پسماندگی کی زندگی گزار رہے ہیں۔ انھیں تحفظات ملنا بے حد ضروری ہے۔ 12 فیصد تحفظات ملنے کے بعد ہی مسلمانوں کی ترقی ہوگی۔ محمد عبدالوحید عطاپور میناریٹی سیل صدر نے کہاکہ مسلمانوں کو تحفظات ضروری ہیں اور یہ ہمارا حق بھی ہے۔ ہمیں ہمارا حق ملنا چاہئے۔ جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست اور ادارہ سیاست سے اظہار تشکر کرتے ہوئے محمد عبدالوحید نے کہاکہ ان کی کاوشوں کی بدولت بی سی کمیشن قائم ہوا اور اُمید ہے کہ بہت جلد ہمیں تحفظات فراہم ہوں گے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT