Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / بارہ فیصد مسلم تحفظات پر کے سی آر کا وعدہ فراموش، مسلمانوں کے جذبات سے کھلواڑ

بارہ فیصد مسلم تحفظات پر کے سی آر کا وعدہ فراموش، مسلمانوں کے جذبات سے کھلواڑ

اندرا پارک پر تنظیم آواز اور میناریٹی سب پلان بارہ فیصد تحفظات، ایکشن کمیٹی کی بھوک ہڑتال
حیدرآباد۔20مارچ(سیاست نیوز)کمیونسٹ پارٹی آف انڈیامارکسٹ کی ذیلی تنظیم آواز اور میناریٹی سب پلان بارہ فیصد تحفظات ایکشن کمیٹی کی جانب سے تلنگانہ میںمسلمانوں کو بارہ فیصد تحفظات کی فراہمی اور سب پلان کے نفاد کا مطالبہ کرتے ہوئے اندرا پارک دھرنا چوک پر ایک روزہ بھوک ہڑتال کی گئی۔ سی پی آئی ایم لیڈر ڈی جی نرسنگ رائو کے علاوہ جنرل سکریٹری ایم ایس آر اے سی ‘ ایم اے ستار سٹی سکریٹری ایم ایس آر اے سی ‘ منہاج قریشی سٹی سکریٹری ساوتھ گریٹر حیدرآباد‘ محمد کلیم‘ عزیز احمد خان ‘ عارفہ بیگم ‘ غوثیہ بی اور دیگر نے اس بھوک ہڑتالی کیمپ سے مخاطب کرتے ہوئے مسلمانوں سے کئے گئے وعدے کے مطابق بارہ فیصد تحفظات اور مسلم سب پلان کا نفاذ عمل میںلانے کا حکومت تلنگانہ سے پرزور مطالبہ کیا گیا۔انڈین یونین مسلم لیگ تلنگانہ صدر عبدالستار مجاہد‘ صدر ایس ڈبلیو ڈی آئی حیات حسین حبیب کے علاوہ دیگر نے احتجاجیوں سے اظہار یگانگت کیا۔ ایم ایس آر اے سی قائدین نے حکومت تلنگانہ پر اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کے جذبات سے کھلواڑ کا الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ انتخابات سے قبل مسلمانوں کو بارہ فیصد تحفظات کی فراہمی کا وعدہ کرکے اقتدار حاصل ہونے کے بعد اپنے وعدوں سے چیف منسٹر کے سی آر منحرف ہوگئے ہیں اور نت نئے طریقوں کے ذریعہ بارہ فیصد مسلم تحفظات کے مسئلہ کو تعطل کاشکار بنانے کی کوشش کررہے ہیں۔ ایم ایس آر اے سی قائدین نے کہاکہ اقلیتوں کی فلاح وبہبود کے لئے بجٹ کی اجرائی تو عمل میںلائی جارہی ہے مگر مذکورہ بجٹ کا تیس فیصد حصہ ہی خرچ کیاجارہا ہے ۔ مذکورہ قائدین نے مزیدکہاکہ حکومت مسلمانوں کے تئیں سنجیدگی اختیار کرنے کے بجائے بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے بغیر قرضہ جات کی اجرائی کے دعوے پیش کررہی ہے جبکہ حکومت مبینہ طور پر بینک مینجرس کو اپرول جاری ناکرنے کی ہدایت دی رہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT