Wednesday , October 18 2017
Home / کھیل کی خبریں / بحران کا شکار آسٹریلیائی ٹسٹ ٹیم میںچھ تبدیلیاں

بحران کا شکار آسٹریلیائی ٹسٹ ٹیم میںچھ تبدیلیاں

میٹ رنشا ‘ پیٹر ہنیڈس کومب ‘ نک میڈنسن کی بحیثیت بلے باز شمولیت ‘ وائیٹ واش سے بچنا مقصد
اڈیلیڈ 20 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) بحران کا شکار آسٹریلیا نے جنوبی افریقہ کے خلاف اپنے اہمیت کے حامل تیسرے ڈے نائیٹ ٹسٹ کیلئے ٹیم میں چھ تبدیلیاں کی ہیں۔ ٹیم میں انگلینڈ میں پیدا ہوئے اوپنر میٹ رنشا کو شامل کیا ہے ۔ ٹیم میں جملہ چھ تبدیلیاں ہوئی ہیں۔ سلیکٹرس نے 20 سالہ اوپنر رنشا کو جو کوئین لینڈ کیلئے کھیلتے ہیں پیٹر ہینڈس کومب اور نک میڈنسن کے ساتھ ٹیم میں شامل کیا ہے ۔ یہ دونوں بھی پہلی مرتبہ ٹسٹ ٹیم میں شامل ہوئے ہیں۔ فاسٹ بولر چاڈ سائرس اور جیکسن برڈ کو بھی قومی ٹیم میں واپس طلب کرلیا گیا ہے جبکہ میتھیو ویڈ کو بحیثیت وکٹ کیپر شامل کیا گیا ہے ۔ ٹیم سے پیٹر نیول کو جو وکٹ کیپر تھے خارج کردیا گیا ہے ۔ آسٹریلیا نے آخری مرتبہ 1984 میں اپنی ٹسٹ ٹیم میں چھ تبدیلیاں کی تھیں جب انہیں اس وقت کی طاقتور سمجھی جانے والی ویسٹ انڈیز کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا ۔ گذشتہ چہارشنبہ کو ٹیم کے چیف سلیکٹر راڈ مارش نے ٹیم کی ناقص کارکردگی کی اخلاقی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے استعفی پیش کردیا تھا جس کے بعد ٹریور ہانس کو عبوری چیف سلیکٹر کی ذمہ داری سونپی گئی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ ووگس ‘ آل راونڈر مچل مارچ اور اسپنر اسٹیو او کیف کو زخموں کی وجہ سے ٹیم میں شامل کرنے پر غور نہیں کیا گیا ۔ ٹیم میں یہ ڈرامائی تبدیلیاں اس لئے کی گئی ہیں

کیونکہ ہوبرٹ میں ہوئے دوسرے ٹسٹ میں بھی آسٹریلیائی ٹیم کو افریقہ کے خلاف بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا اور اس کامیابی کے ساتھ مہمان ٹیم نے تین ٹسٹ میچس کی سیریز میں 2 – 0 کی ناقابل شکست سبقت حاصل کرلی تھی ۔ اڈیلیڈ اوول میں جمعرات سے دونوں ٹیموں کے مابین تیسرا ٹسٹ کھیلا جانے والا ہے ۔ یہ ٹسٹ پہلا ڈے نائیٹ ٹسٹ ہوگا اور اس میںگلابی گیند استعمال کی جائیگی ۔ اگر جنوبی افریقہ کی ٹیم یہ میچ بھی جیت لیتی ہے تو آسٹریلیا کو اپنی تاریخ میں پہلی مرتبہ ہوم سیریز وائیٹ واش کی ہزیمت سے گذرنا ہوگا ۔ جہاں تک میٹ رنشا کا تعلق ہے وہ یارک شائر میں پیدا ہوئے اور انگلینڈ میں بڑھے ۔ 10 سال کی عمر میں وہ آسٹریلیا آگئے تھے ۔ ٹریور ہونس نے کہا کہ میٹ نے بحیثیت کھلاڑی کم وقت میں ہی اپنی صلاحیتوں کو منوالیا ہے اور وہ ملک کی خدمت کرنے کی بھی اہلیت رکھتے ہیں۔ فی الحال وہ بہترین فارم میں ہیں اور ہم انہیں مستقبل کیلئے ایک بہترین امکان سمجھتے ہیں۔ وکٹوریا کے بلے باز ہینڈس کومپ بھی برطانوی پاسپورٹ رکھتے ہیں لیکن وہ آسٹریلیا میں انگلش والدین کو پیدا ہوئے تھے ۔ ہونس نے ان کے فارم کے تعلق سے بھی مثبت رائے دہی ہے اور امید ظاہر کی کہ وہ افریقہ کے خلاف بہتر مظاہرہ کرینگے ۔

TOPPOPULARRECENT