Monday , August 21 2017
Home / عرب دنیا / بحرین : بوسیدہ عمارتوں کے انہدام کے خصوصی قواعد

بحرین : بوسیدہ عمارتوں کے انہدام کے خصوصی قواعد

مناما ۔27ڈسمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)مملکت بحرین میں ایسی قدیم عمارتیں جو انسانی زندگیوں کے لئے خطرے کا باعث بن سکتی ہیں، اب انھیں منہدم کردیا جائے گا، جب کہ مختلف رہائشی و کمرشیل علاقوں میں مکانات کی تعمیر صرف اور صرف حکومت کی خصوصی اجازت سے ہی عمل میں لائی جائے گی۔ یہ اعلان ایک اہم وزیر نے کیا۔ دی گلف ڈیلی نیوز میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق ورکس، بلدیات اور شہری منصوبہ بندی سے متعلق امور کے وزیر جناب ایصام خلف کے مطابق انھیں خاص طورپر ان عمارتوں کے بارے میں تشویش لاحق ہے، جو جوکھم بھری قدیم عمارتوں کو ڈھائے جانے کے دوران زد میں آسکتی ہیں۔ بالفاظ دیگر قدیم اور خستہ حال عمارتوں کو ڈھائے جانے کے دوران ان سے متصل اور اطراف و اکناف کی عمارتوں کو جوکھم لاحق ہوسکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا: ’’ہم چاہتے ہیں جب بلڈوزرس کے ذریعہ قدیم اور بوسیدہ عمارتوں کو منہدم کیا جائے تو اس وقت خانگی جائدادوں کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے، خاص طورپر قدیم بستیوں میں مکانات کے انہدام کے موقع پر اس طرح کی امکانی شکایتیں بہت آئیں گی‘‘۔ جناب خلف کا مزید کہنا تھا کہ قدیم عمارتوں کے انہدام کے دوران دوسری عمارتوں کو نقصان نہ پہنچے، اس بات کا خاص خیال رکھا جائے گا اور اس کے لئے حکومت نئی ٹکنالوجیز اور طریقوں کا استعمال کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT