Thursday , August 17 2017
Home / دنیا / بدعنوانی معاملہ میں خالدہ ضیاء کو مستقل ضمانت

بدعنوانی معاملہ میں خالدہ ضیاء کو مستقل ضمانت

 

ڈھاکہ ۔ 9 اگسٹ ۔(سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش کی ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم خالدہ ضیاء کی بدعنوانی کے ایک معاملہ میں مستقل ضمانت منظور کرلی ہے ۔ اُن پر الزام ہے کہ انھوں نے 21 ملین بنگلہ دیشی ٹکا کا بیجا استعمال کیا۔ بدعنوانی کا معاملہ 2008 ء میں دائر کیاگیاتھا ۔ انسداد بدعنوانی کمیشن (ACC) کی ملزمہ خالدہ ضیاء ، اُن کے فرزند طارق رحمن اور دیگر چار کو ضیاء آرفینج (یتیم خانہ) ٹرسٹ بدعنوانیوں میں مبینہ طورپر ملوث پایا گیا تھا ۔ جسٹس عنایت الرحیم اور جسٹس شاہدالکریم پر مشتمل ایک بنچ نے 2008 ء میں ہائیکورٹ کی ایک فیصلہ کی سماعت کے بعد یہ حکم صادر کیا۔ اخبار ڈیلی اسٹار کے مطابق خالدہ ضیاء 37 معاملات میں ملوث ہیں، اب ان تمام معاملات پر ضمانت پاچکی ہیں۔ خالدہ ضیاء کے وکیل ذاکر حسین بھوئیاں نے یہ بات بتائی۔ عدالت نے 2008 ء میں ایک حکم جاری کرتے ہوئے بنگلہ دیش حکومت سے استفسار کیا تھا کہ وہ اس بات کی وضاحت کرے کہ خالدہ ضیاء کو اس معاملہ میں ضمانت کیوں نہ منظور کی جائے ؟ عدالت نے یہ حکم بھی دیا ہے کہ اگر خالدہ ضیاء ضمانت پر رہائی کا بیجا استعمال کرتی ہیں تو اُس صورت میں ضمانت کو منسوخ کیا جاسکتا ہے ۔ تمام چھ ملزمین میں خالدہ ضیاء، سابق بی این پی قانون ساز سلیم الحق کمال او تاجر شرف الدین احمد کی ضمانت منظور کی گئی ہے جبکہ مابقی بشمول طارق رحمن مفرور ہیں۔

TOPPOPULARRECENT