Thursday , August 24 2017
Home / ہندوستان / برسر خدمت خواتین کو صنفی تعصب کی شکایت

برسر خدمت خواتین کو صنفی تعصب کی شکایت

نئی دہلی ۔ 7 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) خانگی شعبہ میں برسر خدمت ایک چوتھائی خواتین مختلف وجوہات کی بناء اپنی ملازمت سے سبکدوش کی خواہشمند ہیں جس میں  غیر سہولت بخش اوقات کار ، صنفی امتیازات ، سلامتی کا مسئلہ ، دفاتر میںہراسانی اور دیگر شامل ہیں۔ صنعتکاروں کے ادارہ اسوچم نے ایک سروے میں یہ انکشاف کیا ہے۔اس سروے میں تقریباً 500 خواتین سے رائے طلب کر نے پر بتایا کہ کام کے مقامات پر ان کے اداروں (آرگنائزیشن) کی جانب سے شکایات کی یکسوئی کا کوئی میکانزم نہیں ہے اور خواتین کو محفوظ ماحول فراہم کرنے کیلئے کوئی قانونی ضمانت نہیں ہے ۔ سروے میں کہا گیا ہے کہ تقریباً 25 فیصد ورکنگ ویمنس سے اپنی ملازمتوں سے سبکدوش ی کی خواہشمند ہیں کیونکہ انہیں نامعقول اوقات کار ، رات دیر گئے تک دفاتر میں بیٹھے رہنا ، صنفی تعصب اور ہراسانی ، سلامتی کا فقدان اور کام کے نامساعد حالات اور خاندانی مسائل سے دوچار ہیں جبکہ 40 فیصد ورکنگ مدرس (برسر خدمت مائیں) اپنے بچوں کی دیکھ  بھال کیلئے سبکدوش ہونا چاہتی ہیں۔ ہراسانی کے مسئلہ پر تقریباً 30 فیصد خواتین نے بتایا کہ کامکے مقامات پر انہیں ہراسانی اور پرموشن اور کل یدی عہدوں پر تقرر سے محروم کیا جاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT