Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / برسر عام کچرا پھینکنے والوں کی خیر نہیں : جی ایچ ایم سی

برسر عام کچرا پھینکنے والوں کی خیر نہیں : جی ایچ ایم سی

پوسٹرس اور پینٹنگ بھی ناقابل برداشت ، کمشنر ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی

حیدرآباد /14 مارچ ( سیاست نیوز ) شہر میں عام مقامات پر کچرہ ڈالنے والوں کے خلاف بلدی عہدیداروں نے کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ شہر میں نشاندہی کردہ ایسے مقامات جہاں کچرہ ڈالا جاتا ہے ان مقامات کو بچانے کیلئے بلدیہ نے ا قدامات کا آغاز کردیا ۔ ان مقامات سے کچرے کی صفائی کے بعد بیل بوٹے نقش کرنے اور پوسٹرس آویزاں کئے جارہے ہیں ۔ اس کے علاوہ برسر عام کچرہ ڈالنے والوں کی سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعہ نشاندہی کی جائے گی ۔ یہ بات کمشنر بلدیہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے بتائی ۔ انہوں نے سوچھ حیدرآباد پروگرام اور ریاستی وزیر پنچایت راج مسٹر راما راؤ کے 100 دن خصوصی پروگرام کے تعلق سے بات کی اور بتایا کہ شہر کا کچرہ راست مکانات سے ڈمپنگ یارڈ منتقل کیا جائے گا ۔ انہوں نے بتایا کہ عظیم تر حیدرآباد کے حدود میں 1,116 ایسے مقامات کی نشاندہی کی گئی ہے ۔ جہاں برسر عام کچرہ ڈالا جاتا تھا یا پھر ان مقامات پر بڑے کچرہ داں تھے ۔ تاہم انہوں نے بتایا کہ 289 مقامات کو گندگی سے پاک کیا گیا ہے اور ان مقامات پر دوبارہ کچرہ نہ ڈالنے کے اقدامات کرتے ہوئے بیل بوٹے نقش ( مُگو) کئے گئے ہیں ۔ کمشنر بلدیہ نے بتایا کہ برسر عام مقامات پر عوامی تعاون سے سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جارہے ہیں تاکہ سڑکوں اور عام مقامات پر کچرہ ڈالنے والوں کی نشاندہی کی جاسکے اور ان کے خلاف کارروائی ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ مقامی کارپوریٹرس ، کمیٹیوں ، رضاکار تنظیموں کے اشتراک سے بیانرس لگائے جائیں گے اور کچرہ کو عام مقامات پر ڈالنے سے روکا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT