Saturday , August 19 2017
Home / دنیا / برطانوی سیاست داں فلسطین سے متعلق خارجہ پالیسی تبدیل کرنے کے خواہاں

برطانوی سیاست داں فلسطین سے متعلق خارجہ پالیسی تبدیل کرنے کے خواہاں

لندن 28 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) برطانیہ کی اسرائیل نواز حکومت کو ایک بارپھر پارلیمنٹ کی جانب سے شدید تنقید کا سامنا ہے۔ برطانیہ کیکئی سرکردہ سیاست دانوں اور ارکان پارلیمنٹ نے اپنی حکومت کی فلسطین سے متعلق خارجہ پالیسی کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے حکومت سے پالیسی میں موثر تبدیلی کا مطالبہ کیا ہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق برطانوی پارلیمنٹ کے ایک دیرینہ رکن اور سرکردہ سیاست دان “جیرالڈ کوفمان” نے لندن میں “مرکز برائے حق واپسی” نامی تنظیم کے زیراہتمام ایک سیمینار سے خطاب میں حکومت پر شدید نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا ہے کہ لندن حکومت صہیونی لابی کے زیراثر ہے۔ حکومت کے تمام اہم فیصلوں اور خارجہ پالیسی پر صہیونی لابی کھل کر اثر انداز ہو رہی ہے۔ انہوں نے حکومت سے فلسطین سے متعلق روا رکھی گئی موجودہ پالیسی کو تبدیل کرتے ہوئے غیرمعمولی اصلاحات کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ فلسطین کے علاقوں مغربی کنارہ اور بیت المقدس میں اس وقت جو کچھ ہو رہا ہے اسے اسرائیل اور صہیونی لابی کی نظروں سے دیکھنے کے بجائے حقیقت کی نگاہ سے دیکھا جائے۔جیرالڈ کوفمان نے کہا کہ برطانوی حکومت کی فلسطین میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں پر خاموشی بھی قابل گرفت ہے۔ اسرائیل روز مرہ کی بنیاد پر فلسطینیوں کے حقوق پامال کررہا ہے اور برطانوی حکومت اس پر خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT