Sunday , August 20 2017
Home / دنیا / برطانوی عام انتخابات میں تھریسامے واضح اکثریت حاصل کرنے کی خواہاں

برطانوی عام انتخابات میں تھریسامے واضح اکثریت حاصل کرنے کی خواہاں

لندن ۔ 7 ۔ جون : ( سیاست ڈاٹ کام): برطانیہ میں انتخابی مہمات کا آخری دن بھی بڑا ہی دلچسپ اور مصروف ترین رہا ۔ لندن برج پر حملے کے بعد بھی یہاں عوام میں انتخابات کے تعلق سے جوش و خروش میں کوئی کمی نہیں دیکھی گئی ۔ انتخابی مہمات یوں تو کافی دنوں سے چل رہی تھیں لیکن حالیہ دہشت گرد حملوں پہلے مانچسٹر اور پھر لندن برج واقعہ نے نہ صرف برطانوی عوام اور بلکہ ساری دنیا کی توجہ ایکبار پھر دہشت گردانہ واقعات کی جانب مبذول کردی ۔ یاد رہے کہ وزیراعظم برطانیہ تھریسامے نے 18 اپریل کو اسناپ الیکشن کا جس وقت اعلان کیا گیا اس وقت ان کے عزائم کافی بلند تھے ۔ بریگزیٹ سرگرمیوں کو ایک طرف کرتے ہوئے انہوں نے حریف جماعت لیبر پارٹی کے خلاف دو ہندسی سبقت بھی حاصل کی تھی لیکن حالیہ دنوں میں کنزرویٹیو قائد کے عزائم کچھ سرد پڑ گئے ہیں اور ان کی مقبولیت میں بھی نمایاں کمی ہوئی ہے کیوں کہ اس وقت بحث کا موضوع یوروپی یونین کی رکنیت سے ہٹ کر ڈومیسٹک پالیسی اور سیکوریٹی پر خود ان کے ریکارڈ پر مرکوز ہوگیا ہے ۔ منگل کو رائے دہندوں سے خطاب کرتے ہوئے تھریسامے نے کہا تھا کہ اگر برطانیہ کو مزید ترقی دینا ہے ، اگر آپ چاہتے ہیں کہ میں ملک کی قیادت کروں ، تو میرے ہاتھ مضبوط کیجئے ۔ یہ خطاب انہوں نے اسٹوک ۔ آن ۔ ٹرینٹ نامی شہر میں کیا جہاں برطانیہ کے یوروپی یونین سے اخراج کے حق میں سب سے زیادہ ووٹ دئیے گئے تھے ۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی دلچسپ ہوگا کہ بریگزیٹ مذاکرات کا 19 جون سے آغاز ہونے والا ہے لہذا قبل ازیں تھریسامے اس بات کی خواہاں ہیں کہ یو کے انڈپنڈنس پارٹی کے علاوہ لیبر پارٹی کے بھی ووٹس انہیں مل جائیں اور وہ واضح اکثریت حاصل کرسکیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT