Saturday , May 27 2017
Home / شہر کی خبریں / برقی شرحوں میں اضافہ ناگزیر، دونوں ڈسکامس خسارہ میں

برقی شرحوں میں اضافہ ناگزیر، دونوں ڈسکامس خسارہ میں

کمپنی پر تین ہزار کروڑ کا بقایا
عنقریب شرحوں میں اضافہ ممکن
حیدرآباد۔20فروری(سیاست نیوز) ریاست میں برقی شرحوں میں اضافہ ناگزیر ہو چکا ہے اور شرحوں میں اضافہ کیلئے دونوں برقی کمپنیوں کی جانب سے کئی اقدامات کئے جانے لگے ہیںاور حکومت کو ریاست کے دونوں ڈسکامس کی حالت سے واقف کرواتے ہوئے برقی شرحوں میں اضافہ کے فیصلہ پر زور دیا جا نے لگا ہے کیونکہ تلنگانہ اسٹیٹ سدرن پاؤر ڈسٹریبیوشن کمپنی لمیٹیڈ اور تلنگانہ اسٹیٹ نادرن پاؤر ڈسٹریبیوشن کمپنی لمیٹیڈ کو ہو رہے خسارہ سے بچنے کیلئے دونوں کمپنیوں کو سرکاری سبسیڈی حاصل کرنی پڑ رہی ہے اور اس کے باوجود بھی دونوں کمپنیاں خسارے میں ہیں۔ دو ماہ سے جاری کوششوں اور برقی شرحوں میں کم سے کم اضافہ کے سلسلہ میں کی گئی کوششوں کے باوجود دونوں ڈسکامس نے حکومت کو جو رپورٹ پیش کی ہے اس کے مطابق دونوں ڈسکامس کو سال 2017-18کے دوران 10000کروڑ کا خسارہ ہونے کا خدشہ ہے۔ اسی لئے یہ ضروری ہے کہ برقی شرحوں میں اضافہ کا فیصلہ کرنا ناگزیر تصور کیا جا رہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ زرعی شعبہ میں جاری طلب اور اس میں ہورہے مسلسل اضافہ کے سبب برقی کمپنیو ںکو نقصان کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ذرائع کے بموجب برقی کمپنیو ںکو سال 2017کے دوران طلب کے مطابق برقی سربراہی کیلئے 32ہزار 500 کروڑ درکار ہوں گے جن کے ذریعہ 5ہزار ملین یونٹ برقی سربراہی میں اضافہ ممکن ہوگا۔ دونوں کمپنیو ںکی جانب سے پیش کردہ تجاویز کے مطابق برقی شعبہ کے مرکزی حکومت کے منصوبہ UDAYمیں شمولیت کے بعد کچھ راحت میسر آئی لیکن اس کے باجود ریاستی حکومت سے سبسیڈی کا حصول ضروری رہا ریاستی و مرکزی حکومت کی امداد کے باوجود دونوں کمپنیوں پر 3000کروڑ تک کے بقایا جات ہیں جس کے سبب برقی شرحوں میں اضافہ کے متعلق قطعی فیصلہ کیا جانے کا امکان ہے اور یہ 3000کروڑ کے قرضہ جات کیلئے ریاست کے عوام پربرقی شرحوں میں اضافہ کے ذریعہ بوجھ عائد کیا جائے گا۔ بتایاجاتا ہے کہ تلنگانہ الکٹرسٹی ریگولیٹری کمیشن نے 23فروری تک دونوں کمپنیو ںکو مہلت فراہم کی ہے کہ وہ اپنی تجاویز روانہ کریں اگر ایسا کرنے میں دونوں کمپنیاں ناکام ہوتی ہیں تو ایسی صورت میں ٹی ایس ای آر سی کی جانب سے اپنے طور پر فیصلہ کرتے ہوئے برقی شرحوں میں اضافہ کے متعلق فیصلہ کئے جانے کے امکانات ہیں کیونکہ ای آر سی سے برقی شرحوں میں اضافہ کیلئے ٹرانسکو کی جانب سے سفارش کی جا چکی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT