Wednesday , August 23 2017
Home / دنیا / بروسلز کی مسجد میں سفید پاوڈر دستیاب ہونے پر سنسنی

بروسلز کی مسجد میں سفید پاوڈر دستیاب ہونے پر سنسنی

بروسلز 26 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) بلجیم کے دارالحکومت بروسلز کی ایک مسجد میں ایک سفید پاڈر پر مشتمل پاکٹ پایا گیا جس سے یہاں سنسنی پیدا ہوگئی ۔ منتظمین نے اسے انتھراکس سمجھ کر فائر عملہ اور دیگر متعلقہ حکام کو اطلاع دی تھی ۔ کہا گیا ہے کہ یہ مسجد بروسلز میں یوروپین یونین کے ہیڈکوارٹرس کے قریب واقع ہے ۔ اس پاوڈر کو انتھراکس سمجھ لیا گیا تھا جس سے سنسنی پیدا ہوگئی تھی ۔ مسجد کے منتظمین کی جانب سے حکام کو اطلاع دئے جانے پر وہاں درجن بھر ایمرجنسی گاڑیاں ‘ بشمول پولیس ویانس وغیرہ جمع ہوگئی تھیں۔ یہ اسلامک و کلچرل سنٹر بلجیم ہے ۔ یہ ادارہ سعودی عرب کی جانب سے قائم کیا گیا تھا ۔ اس میں ایک مسجد بھی ہے جو یوروپین کمیشن کے دفتر سے 200 میٹر کے فاصلے پر ہے ۔ فائر سروسیس کی ایک ترجمان نے بتایا کہ اسے مسجد سے فون کال موصول ہوا تھا کہ انہیں مسجد میں انتھراکس پاوڈر دستیاب ہونے کا شبہ ہے ۔ اس کے بعد یہاں خصوصی عملہ اور حکام کو متعین کردیا گیا تھا ۔ ابھی یہ پتہ نہیں سل چکا ہے کہ یہ سفید پاوڈر در اصل تھا کیا ۔ بلجیم کے میڈیا نے کہاکہ مسجد سے ایک لفافہ دستیاب ہوا ہے جس میں سفید پاوڈر موجود ہے ۔ 13 نومبر کو پیرس میں ہوئے دہشت گردانہ حملہ کے بعد بلجیم کے تقریبا نصف ملین مسلمانوں کی جانب سے استعمال کی جانے والی مساجد کو خطرات درپیش ہونے کی اطلاعات ہیں۔ کہا گیا ہے کہ کرسچین اسٹیٹ نامی کسی تنظیم کی جانب سے یہ خطرہ درپیش ہوسکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT